fbpx

کراچی میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے حاملہ عورت زخمی ، بچہ پیٹ میں جاں بحق

کراچی : سائٹ سپرہائی وے انڈسٹریل ایریا تھانے کی حدود نیو کراچی اللہ والی کے قریب کار پر ڈاکو کی فائرنگ سے کار میں سوار خاتون زخمی ہوگئی جسے تشویشناک حالت میں عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا ، زخمی ہونے والی خاتون کی شناخت 24 سالہ سویرا کے نام سے کی گئی۔

سویرا کے شوہر ابرار نے بتایا کہ وہ گلستان جوہر کا رہائشی ہے، پراپرٹی کی خرید و فروخت کا کام کرتا ہے اور گلشن معمار میں اس کا آفس ہے ، وہ اپنی اہلیہ ، دو سالہ بیٹی اور ساس ، سسر اور سالے کے ہمراہ گلشن معمار سے فالودہ کھا کر ساس ، سسر اور سالے کو چھوڑنے نیو کراچی سندھی ہوٹل میں سسرال جا رہے تھے کہ گلشن معمار سے آتے ہوئے اللہ والی سے کچھ پہلے ایک پلیہ پر سنسان راستے پر دو نقاب پوش افراد کھڑے تھے جن میں سے ایک موٹرسائیکل پر بیٹھا تھا جبکہ دوسرا شخص جو باریش تھا اس کے برابر میں کھڑا تھا۔

انہوں نے بتایا کہ ان کی اہلیہ نے ان سے کہا تھا کہ کار کو روکنا نہیں کیونکہ اس باریش شخص کے ہاتھ میں پستول ہے کار جیسے ہی ان کے قریب پہنچی تو انہوں نے اشارے سے کار کو روکنے کی کوشش کی تاہم انہوں نے کار کو نہ روکتے ہوئے پہلے اس باریش شخص کو ٹکر مار کر گرایا اور اسپیڈ تیز کر دی جس پر وہ شخص دوبارہ کھڑا ہوا اور ایک گولی سامنے سے ونڈ اسکرین پر ماری اور پھر عقب سے کار پر تین مزید فائر کیے۔

سامنے سے کیا جانے والا فائر ان کے برابر والی سیٹ پر بیٹھی ان کی اہلیہ کے پیٹ میں جا لگی ، خوش قسمتی سے دو سالہ بیٹی جو اپنی ماں کی گود میں بیٹھی تھی وہ بچ گئی ، انہوں نے بتایا کہ چند ہی لمحوں میں سویرا خون سے لت پت ہوگئی جس پر وہ اللہ والی پر ایک پرائیوٹ کلینک لے گئے جہاں ڈاکٹر نے علاج کرنے سے منع کر دیا جس پر وہ نیو کراچی سندھ گورنمنٹ اسپتال گئے وہاں ڈاکٹرز نے ابتدائی طبی امداد دی تاہم خون رکنے کا نام نہیں لے رہا تھا جس پر وہ عباسی شہید اسپتال آئے۔

انہوں نے بتایا کہ ان کی اہلیہ کے ہاں دوسرے بچے کی ولادت ہونے والی تھی وہ پانچ ماہ کی حاملہ تھی ، سویرا کو آپریشن تھیٹر منتقل کر دیا گیا، جہاں اس کی حالت انتہائی تشویشناک ہے تاہم ڈاکٹر خاتون کی جان بچانے کی کوشش کر رہے ہیں ، خاتون کے شوہر ابرار صدیقی نے بتایا کہ آپریشن کے دوران پیٹ میں جو بچی تھی وہ جاں بحق ہوگئی جبکہ ان کی اہلیہ کی حالت بھی تشویشناک ہے۔

سویرا کو عباسی شہید اسپتال سے اسٹیڈیم روڈ پر نجی اسپتال منتقل کر دیا گیا ، ان کا کہنا تھا کہ معمار سے نیو کراچی کی جانب آنے والی سڑک پولیس نے کرائے پر ڈاکوؤں کو دے رکھی ہے ایک ماہ قبل بھی ڈاکو اسی علاقے میں ان سے ایک لاکھ روپے سے زائد کی نقدی اور دیگر سامان لوٹ کر فرار ہوگئے تھے ۔

دوران آپریشن خاتون کے پیٹ میں موجود بچہ جاں بحق ہوگیا ، خاتون کی حالت بھی تشویشناک ہے ، شوہر کا کہنا تھا کہ پولیس نے معمار سے نیو کراچی آنے والی سڑک ڈاکوؤں کو کرائے پر دی ہوئی ہے جہاں ڈاکو شہریوں کا گھات لگا کر انتظار کرتے ہیں ۔