لداخ میں بھارت اور چین کے درمیان صورتحال چیلنجنگ ہے،بھارتی وزیر خارجہ

0
36

نئی دہلی: وزیر خارجہ ایس۔ جے شنکر نے کہا کہ لداخ میں ہندوستان اور چین کے درمیان صورتحال چیلنجنگ ہے۔

باغی ٹی وی: بھارتی میڈیا کے مطابق انڈیا ٹوڈے کانکلیو کے دوران چین کے ساتھ سرحدی تنازع پر بات کرتے ہوئے جے شنکر نے کہا کہ حالات اب بھی کچھ جگہوں پر انتہائی نازک اور خطرناک ہیں کیونکہ دونوں ممالک کی فوجیں یہاں بہت قریب ہیں۔

بھارتی پولیس نے خالصتان کے حامی سکھ رہنما کو گرفتارکرلیا

بھارتی وزیر خارجہ نے کہا کہ ہندوستان اور چین کے درمیان تعلقات اس وقت تک معمول پر نہیں آسکتے جب تک کہ ستمبر 2020 میں سرحدی تنازعہ حل ہونے کے بعد چینی ہم منصب کے ساتھ سمجھوتہ نہیں ہو جاتا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ چین کو وہی کرنا ہے جو دونوں ممالک کے درمیان طے پایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگرچہ دونوں ممالک کی فوجیں بہت سے علاقوں سے پیچھے ہٹ چکی ہیں تاہم بعض نکات پر بات چیت جاری ہے چین کے نئے وزیر خارجہ کن گینگ کے ساتھ اس ماہ ہندوستان کی میزبانی میں جی 20 وزرائے خارجہ کی میٹنگ کے موقع پر صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

چینی صدراگلے ہفتے سرکاری دورے پر روس روانہ ہوں گے

جے شنکر نے کہا کہ اس سال جی 20 کی صدارت کرتے ہوئے، جے شنکر نے امید ظاہر کی کہ نئی دہلی عالمی مینڈیٹ کے لیے فورم کو مزید سچا بنا سکتا ہےجی 20 کو صرف بحث کا علاقہ نہیں ہونا چاہیے تمام عالمی خدشات کو دور کرنے کی ضرورت ہے۔

جے شنکر نے کہا کہ ہم نے پہلے ہی اس چیز کو بہت مضبوطی سے رکھ دیا ہے۔ اس دوران ایس۔ جے شنکر نے روس اور یوکرین جنگ کے بارے میں بھی بات کی۔ انہوں نے کہا کہ روس اور یوکرین کےمعاملے میں ہندوستان جہاں بھی موقع ملےگا مدد کرنے کی پوری کوشش کرے گا لیکن یہ اہم ہے کہ آیا روس اور یوکرین بات چیت کے راستے پر آنے کو تیار ہیں۔

بھارت کی سب سے بڑی ائیر لائن نے 50 طیارے انڈر گراؤنڈ کر دیئے

Leave a reply