fbpx

مشی خان کے عفت عمر پر تنقید کے نشتر جاری

اداکارہ و ماڈل عفت عمر جنہوں نے حال ہی میں کچھ انٹرویوز دئیے ہیں ان میں سے کسی ایک انٹرویو میں ٹی وی ڈراموں پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے ملک میں بہت ہی گندا ڈرامہ بن رہا ہے اور اتنا گندا ڈرامہ بننے پر میں اس کام کا حصہ نہیں رہ سکتی بلکہ انہوں نے یہاں تک کہا کہ جس طرح کا کام ہو رہا ہے مجھے شرمندگی ہے کہ میں اس کا حصہ ہوں، اس لئے میں شوبز چھوڑنے کا اعلان کر چکی ہوں، عفت عمر نے یہ بھی کہا کہ جتنی خراب فلمیں بن رہی ہیں ان کو دیکھ کر میں اپنا وقت ضائع نہیں کر سکتی۔ عفت کے ایسے بیانات پر مشی خان جو کہ سوشل میڈیا پر بہت ایکٹیو رہتی ہیں ان کو آیا غصہ اور انہوں نے عفت کو ایکبار پھر آڑھے ہاتھوں لے لیا اور سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ لگائی جس میں انہوں نے طنز کرتے ہوئے لکھا کہ ایک اچھی خبر یہ ہے کہ اب عفت عمر کی شکل ہمیں کم کم دیکھنے کو ملے گی لیکن اسکا مطلب یہ نہیں کہ اب وہ مریم نواز کے جلسوں میں ان کے ساتھ کھڑی ہوں گی۔ مشی خان کی یہ پوسٹ خاصی وائرل ہوئی ہے لیکن تاحال عفت عمر نے اس پوسٹ پر کسی قسم کا رد عمل نہیں دیا ۔

عفت عمر نے اپنے حالیہ ایک انٹرویو میں مشی خان کے سوال پر جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ مشی خان ہوں یا کوئی بھی اور مجھے اس سے فرق نہیں پڑتا کہ کون کیا سوچ رہا ہے اور کیا کہہ رہا ہے مجھے بس جو ٹھیک لگتا ہے میں وہی کہوں گی اور وہی کروں گی۔ یاد رہے کہ مشی خان عمران خان کی بہت بڑی سپورٹر ہیں اور جو بھی ان کے خلاف کوئی بات کرتا ہے تو وہ خوب اسکی تسلی کرتی ہیں جبکہ عفت ماضی میں عمران خان کی سپورٹر تھیں لیکن اب وہ ان کو سپورٹ نہیں کرتیں اور کہتی ہیں کہ ان کو سپورٹ کرنا میری سب سے بڑی غلطی تھی ایسی غلطی کہ جس پر آج تک شرمندہ ہوں۔
یوں سیاسی پسند نہ پسند کے چکر میں ہرکوئی ایک دوسرے کی ٹانگ کھینچنے میں لگا ہوا ہے دیکھتے ہیں کہ یہ جنگ کہاں جا کر رکتی ہے۔