fbpx

مومنہ درید کھڑی ہوگئیں مہرین جبار کے حق میں

چند روز قبل ڈائریکٹر اور پرڈیوسر مہرین جبار برس پڑیں تھیں اپنے ڈراموں‌ پر اور بولیں تھیں کہ ہمارے ڈرامے انڈین سوپ بن گئے ہیں ان میں عورت سمیت ہر کوئی مسلسل ایک اذیت میں دکھایا جاتا ہے مرد حضرات چھوٹی داڑھیاں رکھے ہوئے ہوتے ہیں اور اقساط کو کھینچ کر ایک ہزار تک لیجانے کی کوشش کی جاتی ہے مہرین جبار کے اس بیان پر جہاں انہیں بہت ساری تنقید کا سامنا کرنا پڑا وہیں ان کے ساتھ ان کے حق میں بھی ایک آواز اٹھی اور وہ آواز مومنہ درید کی ہے. ڈائریکٹر اور سینئر پرڈیوسر ہم ٹی وی مومنہ درید کہتی ہیں‌ کہ پاکستانی ٹی وی ڈراموں‌ کے حوالے سے مہرین نے جو بھی کہا ہے میں اس سے بالکل متفق ہوں پاکستانی ڈرامے کی کوالٹی گرنے کے حوالے سے ان کا موقف بالکل درست ہے اور میں ان کے ساتھ کھڑی ہوں. مہرین جبار نے جب سوشل میڈیا پر پاکستانی ڈراموں‌ کے زوال کے حوالے سے سے درج بالا کہی گئی باتوں پر مشتمل پوسٹ کی تھی تو مومنہ درید نے انہیں‌اسی پوسٹ کے نیچے جواب دیا تھا مومنہ کے اس جواب کو سراہا گیا کہ انہوں‌ نے کھلے دل سے تنقید سنی اور اس کے ساتھ اتفاق بھی کیا.

یاد رہے کہ مومنہ درید خود بھی ڈرامے بناتی ہیں اور ان کے ڈرامے بھی روٹین کے بننے والے ڈراموں سے کچھ زیادہ ہٹ کر تو نہیں‌ہوتے لیکن مومنہ اپنے ڈراموں میں‌خواتین کو بااختیار دکھانے کی کوشش ضرور کرتی ہیں. ہم ٹی وی اس وقت ڈراموں کے حوالے سے ایک بڑا نیٹ ورک بن چکا ہے.