این اے 139 پاکپتن،دھاندلی کیخلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ

0
79
ecp

این اے 139 پاکپتن میں انتخابی نتائج کا معاملہ،چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں دو رکنی کمیشن نے سماعت کی،

ہارنے والے آزاد امیدوار راؤ عمر ہاشم خان کے وکیل پیش ہوئے ، وکیل آزاد امیدوار نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر جو فارم 45 اپلوڈ کئے وہ ہمارے فارم سے مختلف ہیں، ہم نے یو ایس بی میں تمام ثبوت جمع کروا دیے،ہم فارم 45 کے مطابق لیڈ کے ساتھ جیتے ہوئے ہیں،ہمارے اور تحریک لبیک پاکستان کے پاس موجود فارم 45 ایک جیسے ہیں،

کمرہ عدالت میں تحریک لبیک پاکستان کے امیدوار کے نمائندگان بھی موجود تھے،کامیاب ہونے والے ن لیگی احمد رضا خان مانیکا کے وکیل بھی پیش ہوئے، وکیل ن لیگی امیدوار نے کہا کہ جب فارم 47 ایشو ہورہے تھے آزاد امیدوار ادھر موجود تھے، یہ تمام اعتراض جو اب اٹھا رہے ہیں ان کو پہلے اٹھانے چاہئیے تھے، میری استدعا ہے ہمارے خلاف دائر درخواست مسترد کی آجائے، اگر ہمارے مدمقابل کو نتائج پر اعتراض ہے تو وہ الیکشن ٹریبونل سے رجوع کریں،کمیشن نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا

پی پی 117 فیصل آباد،کامیاب آزاد امیدوار رانا عبدالرزاق اپنے وکیل کے ہمراہ پیش ہوئے،ہارنے والے ن لیگی امیدوار رضوان بٹ کے وکیل بھی پیش ہوئے، وکیل ن لیگی امیدوار نے کہا کہ ہماری استدعا ہے کہ ری کاؤنٹنگ کی جائے، چیف الیکشن کمشنر نے استفسار کیا کہ آپ کتنی لیڈ سے ہارے اور کیا آپ نے آر او کو درخواست دی،وکیل ن لیگی امیدوار نے کہا کہ ہم چودہ ہزار کی لیڈ سے ہارے اور آر او کو درخواست نہیں دی، وکیل آزاد امیدوار نے کہا کہ میری جیت کے بعد میرے مدمقابل نے مبارکباد کا فون کیا اور اب ری کاؤنٹنگ کا مطالبہ کررہے ہیں،الیکشن کمیشن نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا

Leave a reply