سابق وزیر اعظم نواز شریف کے حق میں ایک اور فیصلہ جاری

0
51

سابق وزیراعظم نواز شریف کی ایوان فیلڈ اور العزیزیہ ریفرسز پر اپیلیں بحال کرنے کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا گیا۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عامر فاروق اور جسٹس میاں گل حسن اورنگ زیب نے 16 صفحات پر مشتمل تفصیلی فیصلہ جاری کیا۔
تحریری فیصلے میں لکھا گیا کہ نواز شریف کی اپیلیں بحال کرنے کی درخواست منظور کی جاتی ہے، نواز شریف کی اپیلوں کو میرٹس پر سن کا فیصلہ کیا جائے گا۔ عدالت کے 19 اکتوبر کے عبوری ریلیف کے باعث نواز شریف کو وطن واپسی پر گرفتار نہیں کیا گیا۔ فیصلے میں لکھا ہے کہ نیب کی جانب سے درخواستوں کی مخالفت نہ کرنے کی بنا پر اپیلیں بحال کرنے کی درخواستیں منظور کی گئی ہیں۔نیب کی جانب سے بیان دیا گیا کہ نواز شریف کو گرفتار نہیں کرنا چاہتے۔سابق وزیر اعظم نواز شریف کی حفاظتی ضمانت کی درخواستیں نمٹائی جاتی ہیں۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے اپنے فیصلے میں مزید کہا کہ نواز شریف نے اپیل بحالی کی درخواست دائر کی، عدالت نے 24 اکتوبر کو نوٹس جاری کیا اور 26 کو نواز شریف کی اپیل بحالی کی درخواست منظور کی۔
عدالت نے فیصلے میں لکھا کہ پنجاب حکومت نے سی آر پی سی سیکشن 401 (2) کے تحت سزا معطل کی۔ العزیزیہ ریفرنس میں پنجاب حکومت کی جانب سے سزا معطل ہو چکی، ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کی سزا معطلی کا فیصلہ بحال کیا جاتا ہے۔

Leave a reply