fbpx

پنجاب کے نگران وزیراعلیٰ کے لیے الیکشن کمیشن کو چار نام موصول

پنجاب کے نگران وزیراعلیٰ کے لیے الیکشن کمیشن کو چار نام موصول

پنجاب کے نگران وزیراعلیٰ کے لیے چار نام الیکشن کمیشن کو موصول ہوگئے، الیکشن کمیشن نے ان ناموں پر ورکنگ کا آغاز کردیا ہے۔ پنجاب اسمبلی تحلیل ہونے کے بعد سابق وزیراعلیٰ پرویز الٰہی کی طرف سے صوبے کے نگران وزیراعلیٰ کے لئے احمد نواز سکھیرا اور نوید اکرم چیمہ کے نام تجویز گئے تھے، جب کہ اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز نے احد چیمہ اور محسن نقوی کے نام بھیجے۔

اپوزیشن اور حکومت کی جانب سے تجویز کردہ ناموں پر اتفاق نہ ہونے کے بعد چاروں نام الیکشن کمیشن کو بھیجے گئے جو ادارے کو موصول ہوگئے ہیں اور الیکشن کمیشن نے موصول شدہ ناموں پر ورکنگ کا آغاز کردیا۔ الیکشن کمیشن کو موصول شدہ چاروں ناموں کے پروفائل تیار کرنے کا عمل شروع کردیا گیا ہے، تفصیلی پروفائل میں چاروں کی قابلیت اور اپنے شعبے میں کارکردگی شامل ہوگی۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن پروفائل اجلاس میں پیش کریں گے، اور الیکشن کمیشن 22 جنوری کو نگران وزیراعلیٰ پنجاب کے نام کا اعلان کرے گا۔

مزید یہ بھی پڑھیں؛
بارشیں برسانے والا نیا سلسلہ 24 جنوری تک جاری رہنے کا امکان
فیفا ورلڈ کپ ٹرافی جیتنے پر خراج تحسین،کسان نے مکئی کے کھیت میں میسی کی تصویر بنا دی
رواں برس ہی روسی افواج کو یوکرینی علاقوں سے نکالنا بہت مشکل ہے،امریکا
بلوچستان مالی بحران:فوری اقدامات نہ کئےتوہم سخت فیصلے کرنے پرمجبور ہوںگے، وزیراعلیٰ بلوچستان
جوکچھ امریکن انٹرنیشنل اسکول میں طالبہ کے ساتھ سلوک ہوا اس کی مذمت کرتےہیں:سٹی سکول
نیا پاکستان اورنیا پاکستان اسلامک سرٹیفکیٹ پرمنافع کی شرح میں اضافہ

یاد رہے کہ پنجاب اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی نگراں وزیر اعلیٰ کے تقرر پر متفق نہ ہوسکی تھی جس کے بعد یہ فیصلہ الیکشن کمیشن کے پاس چلا گیا، اس ضمن میں ای سی پی نے اجلاس طلب کرلیا. نگران وزیر اعلی کے تقرر کیلیے بنائی جانے والی حکومتی اور اپوزیشن اراکین پر مشتمل 6 رکنی پارلیمانی کمیٹی کا اسپیکر سبطین خان کی زیر صدارت اجلاس ہوا تھا، جس میں دونوں کی جانب سے پیش کردہ ناموں پر غور کیا گیا۔

دوران اجلاس متحدہ اپوزیشن کے ارکان اپنے دو نام میں سے کسی ایک کو ہی نگراں وزیر اعلیٰ کے لئے اصرار کرتے رہے جبکہ حکومتی ارکان نے احمد سکیھرا اور نوید اکرم چیمہ میں سے کسی ایک کو نگراں وزیر اعلیٰ تقرری کی تجویز دی۔ پارلیمانی کمیٹی کے اراکین میں کسی ایک نام پر اتفاق رائے نہ ہوسکا تھا جس کے بعد اب اس معاملے کر رات کو الیکشن کمیشن کو بھیج دیا جائے گا۔ جس کے بعد الیکشن کمیشن محسن نقوی، احد چیمہ، نوید اکرم چیمہ اور احمد نواز سکھیرا میں سے کسی ایک کو نگران وزیر اعلی مقرر کرے گا۔

آئینی طور پر نگراں وزیراعلیٰ پنجاب کی تقرری کے لیے الیکشن کمیشن کے پاس 48 گھنٹے کا وقت ہوگا۔ دوسری جانب ذرائع نے بتایا تھا نگران وزیراعلی پنجاب کی تقرری کے معاملے پر الیکشن کمیشن نے مشاورتی اجلاس ہفتے کو طلب کرلیا، جس میں مشاورت کے بعد اتوار کی رات تک الیکشن کمیشن نگران وزیراعلیٰ پنجاب کے نام کا فیصلہ کر سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق الیکشن کمیشن دو دن میں آئین کے آٹیکل 224 اے کے تحت فیصلہ کرے کے نگراں وزیراعلیٰ کے نام کا نوٹی فکیشن جاری کرے گا اور پھر اس کی کاپی صدر، وزیراعظم، گورنر پنجاب کو بھیجی جائے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کا کام صرف نگران وزیر اعلی کی تقرری ہے۔ واضح رہے کہ نگران وزیراعلیٰ کی تقرری کے معاملے پر حکومت اور اپوزیشن کی قائم کردہ 6 رکنی کمیٹی میں کسی نام پر اتفاق نہیں ہوسکا اور نہ ہی اراکین کسی نتیجے پر نہیں پہنچے تھے حکومت نے نگران وزیراعلی پنجاب کیلئے حکومت نے نوید اکرم چیمہ اوراحمد نوازسکھیرا جبکہ اپوزیشن نے محسن نقوی اوراحد چیمہ کو نامزد کیا ہے۔