fbpx

این اے 133 ضمنی الیکشن، جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد:فیصلہ چیلنج کرنے کا فیصلہ

لاہور:این اے 133 ضمنی الیکشن، جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد:فیصلہ چیلنج کرنے کا فیصلہ ،اطلاعات کے مطابق این اے 133 کے ضمنی الیکشن میں پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزدگی مسترد کر دیئے گئے۔

یاد رہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما پرویز ملک کے انتقال کے بعد یہ سیٹ خالی ہوئی تھی جس کے بعد الیکشن میں پاکستان تحریک انصاف کی طرف سے جمشید اقبال چیمہ کو امیدوار بنایا گیا تھا، شائستہ پرویز ملک مسلم لیگ ن کی امیدوار تھیں جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی نے اسلم گل کو میدان میں اُتارا تھا۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار جمشید اقبال چیمہ کے تجویز کنندہ پر اعتراض اٹھاتے ہوئے کہا کہ جمشید اقبال چیمہ کا تجویز کنندہ ماڈل ٹاون کا رہائشی ہے۔

 

 

مسلم لیگ ن کے نصیر بھٹہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی امیدوار جمشید اقبال چیمہ کا تجویز کنندہ محمد بلال این اے 130 کا رہائشی ہے جبکہ الیکشن این اے 133 میں ہو رہا ہے۔ تائید کنندہ، تجویز کنندہ عدالت عظمی، عدالت عالیہ، الیکشن کمشن کی ججمنٹس موجود ہیں۔

مسلم لیگ ن کے نصیر بھٹہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ الیکشن ایکٹ کے سیکشن 60 کے تحت تجویز کنندہ اور تائید کنندہ موجودہ حلقہ کا ہونا چاہیے۔ الیکشن رولز کے تحت جمشید اقبال چیمہ الیکشن لڑنے کےلیے نااہل ہیں۔ جمیشد اقبال چیمہ کے کاغزات نامزدگی مسترد کیے جائیں۔

این اے 133 میں ضمنی الیکشن کے معاملے پر الیکشن کمیشن نے فیصلہ سناتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار جمشید اقبال چیمہ کے کاغذات نامزد مسترد کر دیئے۔

ریٹرننگ افسر نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار جمشید چیمہ اور ان کی اہلیہ مسرت چیمہ کے تجویز کنندہ کا تعلق این اے 133 سے نہیں ہے۔

ادھر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ جمشید چیمہ نےالیکشن کمیشن کا یہ فیصلہ چیلنج کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے اورامید کی جارہی ہے کہ ریویو میں جمشید چیمہ کو الیکیشن لڑنے کا ریلیف مل جائے گا

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!