پی ٹی ایم حملہ کیخلاف سوشل میڈیا صارفین پھٹ پڑے، ملزمان پر فوجی عدالتوں میں‌ مقدمہ چلانے کا مطالبہ

پشتون تحفظ موومنٹ کے میران شاہ میں‌ پاکستانی فوج کی چیک پوسٹوں پر حملہ کے خلاف سوشل میڈیا صارفین کی طرف سے شدید غم و غصہ کا اظہار کیا جارہا ہے اور پاکستانی قوم کے ہر طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے منظور پشتین، محسن داوڑ اور دیگر اہلکاروں کے خلاف فوجی عدالتوں میں‌مقدمہ چلانے کا مطالبہ کیا ہے.

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌کے مطابق سوشل میڈیا پر فیس بک، ٹویٹر اور دیگر سائٹس پر پاکستانیوں نے پی ٹی ایم کی قیادت اور وابستہ اہلکاروں کے خلاف فوری طور پر سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے.

ممتاز تجزیہ نگار زید حامد نے کہا ہے کہ پی ٹی ایم نے آج پہلی مرتبہ ٹی ٹی پی کے خلاف مسلح‌بغاوت کر دی ہے اور یہ انڈیا میں‌مودی کی دوبارہ حکومت میں آنے پر بہت خوش ہیں، ریاست کو چاہیے کہ وہ انہیں‌فوری طور پر کچل دے.

پی ٹی ایم حملہ، سوشل میڈیا پر جعلی تصویروں‌ کا استعمال، انڈیا سے پاک فوج مخالف مہم چلانے کا انکشاف

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھاکہ پی ٹی ایم آستین کا سانپ اور دشمن قوتوں‌ کی ایجنٹ جماعت ہے اسے کچلنا نہایت ضروری ہے. زید حامد کی طرح دیگر صحافیوں، دانشوروں، سیاسی، مذہبی و سماجی جماعتوں کے کارکنان نے بھی پی ٹی ایم کے خلاف فوری کاروائی کا مطالبہ کیا ہے.

پی ٹی ایم نے ٹی ٹی پی کی طرح‌ مسلح بغاوت شروع کر دی، ریاست ان کی دہشت گردی فوری کچلے. زید حامد

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.