fbpx

راولپنڈی رنگ روڈ کرپشن کیس:مرکزی ملزم کیپٹن (ریٹائیرڈ) احمد محمود کی بریت کا آرڈر جاری

اسلام آباد:‏وزیر اعظم شہباز شریف نے خصوصی اختیارات کا استعمال کرتے ہوے راولپنڈی رنگ روڈ کرپشن کیس کے مرکزی ملزم کیپٹن (ریٹائیرڈ) احمد محمود کی بریت کا آرڈر جاری کر دیا،ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم شہبازشریف کی شفقت سے راولپنڈی رنگ روڈ سکینڈل میں سابق کمشنر راولپنڈی کیپٹن (ر) محمد محمود اور لینڈ ایکوائزیشن کلیکٹر وسیم تابش کو کلین چٹ مل گئی۔

راولپنڈی رنگ روڈ سکینڈل میں تحریک انصاف کی بدنتیی اور نااہلی واضح ہوگئی ہے، کیوں کہ اسکینڈل میں پی ٹی آئی کی جانب سے بنائے گئے کیس بے بنیاد نکلے۔

انکوائری رپورٹ کے مطابق سابق کمشنر راولپنڈی کیپٹن (ر) محمد محمود اور لینڈ ایکوائزیشن کلیکٹروسیم تابش کوکلین چٹ مل گئی ہے، اور انکوائری کمیٹی نے ملزمان کو بے گناہ قرار دیتے ہوئے کیس کو بدنیتی قرار دے دیا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ تحریک انصاف کی بدنیتی اورنااہلی کے باعث راولپنڈی رنگ روڈ منصوبے کی لاگت 30 ارب روپے کے اضافے کے ساتھ 90 ارب روپے تک پہنچ گئی ہے، جب کہ یہ منصوبہ 60 ارب روپے میں مکمل ہونا تھا۔

رپورٹ کے مطابق سابق حکومت نے اپنے وزراء شیخ رشید، زلفی بخاری اور غلام سرور خان کو بچانے اور افسران کو قربانی کا بکرا بنانے کی کوشش کی۔

انکوائری کمیٹی کی رپورٹ کی روشنی میں وزیراعظم شہبازشریف نے کیپٹن (ر) محمود کو منصوبے میں کرپشن اور اختیارات سے تجاوز کے الزامات سے بری کر دیا ہے۔

واضح رہے کہ پنڈی رنگ روڈ میں 13 افسران محکمانہ انکوائریز میں بری ہوچکے ہیں۔