رالپنڈی خاتون گینگ ریپ میں‌ نئے انکشافات، فارنزک ایجنسی نے خاتون کے متاثرہ کپڑے اور مزید نمونے مانگ لئے

راولپنڈی میں‌ خاتون کے ساتھ پولیس اہلکاروں کے مبینہ گینگ ریپ سے متعلق نئے انکشافات منظر عام پر آئے ہیں.

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق فارنزک سائنس ایجنسی نے اجتماعی زیادتی کا شکار ہونے والی خاتون کے متاثرہ کپڑے اور مزید نمونےمانگ لیے ہیں. میڈیا رپورٹس میں‌ کہا گیا ہے کہ خاتون کےجسم سےلیےگئے نمونے پولیس اہلکاروں اور ایک سویلین شخص سے میچ نہیں کرسکے. خاتون کے جسم پر لگے دانت کے نشان سے اجزا اٹھاکرنہیں بھیجے گئے. مذکورہ خاتون نےاجتماعی زیادتی کی شکایت دوروزبعد پولیس کو کی تھی.

میڈیکل رپورٹ میں‌ کہا گیا ہے کہ خاتون کےجسم پرتین جگہ خراش اور دائیں بازوپردانت کے کاٹنےکا نشان ہے. یاد رہے کہ اس واقعہ کا مقدمہ راولپنڈی کے تھانہ روات میں درج ہوا تھا اور زیادتی کی شکار خاتون چند دن قبل عدالت میں پیش ہوکر اپنے بیان سے منحرف ہوگئی تھی۔ مدعی خاتون نے بیان قلم بند کراتے ہوئے کہا تھا کہ پولیس کانسٹیبلز عامر، عظیم، راشد اور نصیر میرے ملزمان نہیں ہیں، ان چاروں نے میرے ساتھ کوئی بد اخلاقی نہیں کی بلکہ اصل ملزمان کوئی اور تھے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.