fbpx

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کیا پاکستان کی بہترین خدمات کا اعتراف

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کیا پاکستان کی بہترین خدمات کا اعتراف
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں چالیس برس سے مقیم افغان مہاجرین سے متعلق کانفرنس جاری ہے، جس میں وزیراعظم اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل شریک ہیں،

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری کوآگےآناچاہیئے،پاکستان کی خدمات کےاعتراف میں عالمی تعاؤن بہت کم ہے، پاکستان مہاجرین کوپناہ دینے والادنیا کادوسرابڑاملک ہے،ایران اور پاکستان دو بڑے ممالک ہیں جو بڑی تعداد میں مہاجرین کو پناہ دیتے ہیں، پاکستان کی فراخ دلی دہائیوں پرمحیط ہے،40 سال پاکستان نے افغان مہاجرین کیلئے اپنے دروازے کھلے رکھے،40 سال سے افغان عوام مسائل کا شکار ہیں،

افغان مہاجرین کانفرنس سے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر نے خطاب کرتے ہوئے کہا افغان مسئلہ صرف امن سے ہی حل ہو سکتا ہے، افغانستان میں ابھی بھی خانہ جنگی مکمل ختم نہیں ہوئی، پاکستان اور ایران خطے کے 90 فیصد مہاجرین کی کفالت کر رہے ہیں، مہاجرین کیلئے اقدامات کو سراہتے ہیں، پاکستان افغان مہاجرین کی واپسی کیلئے اپنا کردار ادا کرتا رہے گا، پاکستان 40 سال سے لاکھوں مہاجرین کی مہمان نوازی کر رہا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا پاکستان نے 50 لاکھ مہاجرین کو پناہ دی، مہاجرین کو اسلامی اقدار کے مطابق پناہ دی، ہر مہاجر کی اس کانفرنس سے امیدیں وابستہ ہیں، کوئی بھی ملک اس مسئلے سے اکیلے نہیں لڑسکتا، مسائل کے باوجود لاکھوں مہاجرین کو سہولتیں مہیا کیں، افغانستان میں امن اور مسائل کا حل ناگزیر ہے، پاکستان اور افغانستان کا تعلق مشترکہ مذہب ثقافت پر قائم ہے، پاکستان 40 سال سے افغان مہاجرین کی مہمان نوازی کر رہا ہے، مہاجرین کی واپسی کے روڈ میپ پر عالمی برادری سے مل کر کام کرنا چاہتے ہیں