حکومت نے ٹیکس کا دائرہ کار بڑھاتے ہوئے غریب کی جیب پر قینچی چلانے کا فیصلہ کر لیا جانیے اس خبر میں

(نمائندہ باغی ٹی وی)حکومت نے ٹیکس کا دائرہ کار بڑھاتے ہوئے غریب عوام کی جیب پر قینچی چلانے کا فیصلہ کر لیا
تفصیلات کے مطابق نائی قصائی حلوائی پکوڑے سموسے بیچنے والے ٹائر کو پنکچر لگانے والے اب سب کو ٹیکس دینا پڑے گا پروفیشنل ٹیکس کی مد میں چھوٹے دکانداروں پر 500 سے 15 ہزار تک اضافی بوجھ ڈالا جائے گا مالی سال 2019-20 میں یہ ٹیکس لاگو کر دیا جائے گا دھی بھلے فروٹ چاٹ سموسے پکوڑے سبزی فروش نسوار فروش سالانہ ایک ہزار روپے ٹیکس دینے کے پابند ہوں گے ٹائر پنکچر لگانے والے شاپنگ بیگ سوپ یخنی , مشروبات اور دودھ فروشوں پر 1500 روپے سالانہ ٹیکس لاگو کیا جائے گا مٹھائی بیچنے والوں کیبل آپریٹرز موٹر مکینک پان شاپ اور سینٹری کا کام کرنے والے 4 ہزار روپے قومی خزانے میں جمع کرائیں گے پنساری ڈرائی فروٹ اور خرادیے کا کام کرنے واکے 1500 روپے سالانہ ادا کریں گے سیلون ٹینٹ سروس کارگو اور کلاتھ سٹورز 5ہزار روپے سالانہ ٹیکس دیں گے جبکہ فلور ملز اور پٹرول پمپز سالانہ دس ہزار پروفیشنل ٹیکس دیں گے ٹیکس اکٹھا کرنے کی ذمہ داری میونسپل کارپوریشن کو دی جائے گی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.