ائیر لفٹ کا اسلام آباد سمیت ملک بھر میں سروس بند کرنے کا اعلان

0
43

آن لائن پبلی کیشن ‘ڈیل اسٹریٹ ایشیا’ نے اطلاع دی ہے کہ کوئیک کامرس اسٹارٹ اپ ‘ائیر لفٹ’ کی پاکستان میں سروس مستقل طور پر بند ہورہی ہے۔
دوسری جانب ائیر لفٹ پاکستان نے بھی ایک اعلامیہ میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ہم اپنی سروس بند کررہے ہیں.


ٖتفصیلات  کے مطابق ائیر لفٹ ابتدائی طور پر ایک بس سروس تھی جو بعدازاں ایک ڈیلیوری سروس بن گئی جس نے گزشتہ سال مقامی سطح پر کسی بھی اسٹارٹ اپ کے مقابلے میں سب سے زیادہ ساڑھے 8 کروڑ ڈالر اکھٹا کیا۔

تاہم ائیر لفٹ نے چند ماہ قبل فیصل آباد، گوجرانوالہ، سیالکوٹ، حیدرآباد اور پشاور جیسے شہروں میں اپنی سروس بند کر دی تھی اور تنخواہوں کا بوجھ کم کرنے کے لیے اپنے تقریباً ایک تہائی ملازمین کو فارغ بھی کردیا تھا۔

اسٹارٹ اپ ڈیٹا پورٹل کرنچ بیس کے مطابق ائیر لفٹ نے اپنے حالیہ سرمایہ کاروں ‘فیوچر پازیٹو’ اور ‘موونگ کیپیٹل’ کے ساتھ 6 راؤنڈز میں کُل 10 کروڑ 92 لاکھ ڈالرز اکٹھے کیے۔

پاکستان میں اسٹارٹ اپ ایکو سسٹم گزشتہ چند ماہ سے بحران کا شکار ہے جس کے سبب متعدد نامور کمپنیوں نے اپنی سروس معطل، محدود یا جزوی معطل کرنے کا اعلان کیا۔

معروف سروس ‘کریم’ نے حال ہی میں بدلتے ہوئے معاشی تناظر میں اپنی فوڈ ڈیلیوری سروس کو معطل کر دیا ہے، آن لائن بس سروس ‘سیول’ نے بھی گزشتہ ماہ کراچی، لاہور اسلام آباد اور فیصل آباد میں بھی عالمی کساد بازاری کے سبب اپنی سروس معطل کر دی۔

فرائیٹ مینجمنٹ اسٹارٹ اپ ‘ٹرک اٹ ان’ نے بھی عالمی سطح پر اقتصادی غیر یقینی صورتحال کا حوالہ دیتے ہوئے حال ہی میں اپنی حکمت عملی از سر نو ترتیب دی ہے اور اپنے کچھ عملے کو چند دیگر چیلنجز سئ نمٹنے کے لیے وقف کردیا۔

فی الوقت اسٹارٹ اپس تیزی سے کسٹمر کے حصول کے لیے نئی سرمایہ کاری حاصل کرنے میں مشکلات کا سامان کر رہے ہیں، جبکہ سرمایہ کار کھل کر بھاری سرمایہ کاری کرنے کو تیار نہیں ہیں جس سے اسٹارٹ اپس کو نئے کسٹمرز کے حصول میں مدد مل سکے۔

اسٹارٹ اپس نے اپریل تا جون سہ ماہی میں 22 سودوں میں مجموعی طور پر 10 کروڑ 38 لاکھ ڈالرز اکٹھے کیے جو کہ گزشتہ سہ ماہی سے تقریباً 40 فیصد کم ہے جب یہ 17 کروڑ 30 لاکھ ڈالر تھا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹویٹ میں ایئرلفٹ کمپنی میں غیرملکی سرمایہ کاری کا خیرمقدم کرتے ہوئے سابق وزیراعظم عمران خان نے اپنی 2021 کی ایک ٹویٹ میں کہا تھا کہ کمپنی میں85 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کی جارہی ہے یہ کمپنی پاکستانی نوجوانوں کی جانب سے بنائی گئی ۔

عمرا ن خان نے مزید کہا کہ پاکستان میں بڑی صلاحیت ہے اور سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجو دہیں ،پاکستان عالمی سرمایہ کاری کیلئے کھلا ہے،حکومت سرمایہ کاروں کیلئے مواقع کی فراہمی کیلئے پرعزم ہے۔

Leave a reply