ٹرمپ کے جاتے جاتے امریکا کی ایران کے خلاف بڑی کاروائی کی تیاریاں ، ایرانی وزیر خارجہ نے وارننگ دے دی

0
18

ٹرمپ کے جاتے جاتے امریکا کی ایران کے خلاف بڑی کاروائی کی تیاریاں ، ایرانی وزیر خارجہ نے وارننگ دے دی

باغی ٹی وی رپورٹ کے مطابق ایران کے وزیر خارجہ نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وائٹ ہاؤس روانگی سے قبل ایران کے خلاف آخری لمحے کی مہم جوئی کے خلاف خبردار کر دیا ہے۔محمد جواد ظریف نے ایک ٹویٹ میں لکھا ہے کہ "بغداد میں امریکی سفارتخانے پر راکٹ حملے کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے۔امریکا یاد رکھے اگر ہمارے خلاف کچھ کیا گیا تو اس سے سنگین حملے بھی کرنے کی اہلیت رکھتے ہیں. اس بار امریکا کے ساتھ بہت برا ہوگا.

ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پچھلی بار ، امریکہ نے ڈبلیو ایم ڈی کی جعلی سازشوں پر ہمارے خطے کو برباد کردیا ، 7 ٹریلین ضائع کرکے 58،976 امریکی ہلاکتیں کیں ،” ظریف نے 2003 میں امریکہ پر عراق کے حملے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا۔

انہوں نے متنبہ کیا کہ اگر اس بار ہم پر حملے کی حماقت کی گئی بہت برا ہوگا.اتوار کے آخر میں ، عراقی عہدیداروں نے اعلان کیا تھا کہ کم از کم تین کتتوش راکٹ بغداد کے گرین زون پر گرائے گئے تھے.یہ راکٹ امریکی سفارتی مشن کے قریب پہنچے جس کے نتیجے میں کسی جانی نقصان کی اطلاعات نہی‌ہیں . لیکن یہ راکٹ گرتے ہیں‌ ، گرین زون کمپاؤنڈ میں الارم بج اٹھے تھے

امریکا اور ایران کے درمیان کشیدگی میں اضافہ جاری ہے۔ بالخصوص 20 دسمبر کو اس راکٹ حملے کے بعد جس میں بغداد کے گرین زون میں امریکی سفارت خانے کو نشاہ بنایا گیا۔ واشنگٹن نے اس کارروائی کا الزام ایران پر عائد کیا ہے۔ امریکی انتظامیہ کے ایک سینئر ذمے دار نے انکشاف کیا ہے کہ قومی سلامتی کے سینئر ذمے داران نے متعدد آپشنز پر اتفاق رائے کیا ہے۔ یہ آپشنز صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو پیش کیے جائیں گے۔ ان کا مقصد عراق میں امریکی عسکری اور سفارتی اہل کاروں کو نشانہ بنانے کے لیے کیے جانے والے کسی بھی حملے کو روکنا ہے۔

Leave a reply