fbpx

گوادر میں چینی قافلے پر حملہ خود کش تھا :رپورٹ منظرعام پرآگئی

اسلام آباد:گوادر میں چینی قافلے پر حملہ خود کش تھا :رپورٹ منظرعام پرآگئی ،اطلاعات کے مطابق وفاقی وزارت داخلہ نے گوادر میں ہونے والے دھماکے کو چینی قافلے میں خودکش حملہ قرار دیا ‏ہے۔

وزارت داخلہ کے مطابق گوادر ایسٹ بےایکسپریس وے پر چینی قافلے پر خودکش حملہ کیا گیا، ‏قافلہ 4گاڑیوں پرمشتمل تھا، قافلے کے ساتھ آرمی اور پولیس کی گاڑیاں بھی تھیں۔

وزرات داخلہ کا کہنا ہے کہ کالونی سے نکلنے والے حملہ آور کو سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاروں ‏نے روکا تو حملہ آور نے قافلے سے 15 سے 20 میٹر دور خود کو اڑا لیا۔

وزارت داخلہ کے مطابق حملے میں ایک چینی باشندہ زخمی ہوا جب کہ دھماکے کے قریب ‏کھیلنے والے دو بچے جاں بحق، 2 زخمی ہو ئے۔

بیان میں وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ چینی اور پاکستان حکام دونوں ملکوں کی دوستی کولاحق ‏خطرات کا ادراک ہے پاکستان نےچائنیز کی سیکیورٹی کے حوالے سے خاطر خواہ اقدامات اٹھا رکھے ‏ہیں اس مشکل دور میں دونوں ممالک ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں۔

یاد رہےکہ آج گوادر میں چینیوں کے قافلے پر خود کش حملہ کیا گیا، حملے میں دو بچے شہید اور دو شدید زخمی ہوگئے جس کو ہسپتال منتقل کردیا گیا جبکہ ایک چینی شہری بھی معمولی زخمی ہوا، پاک آرمی کے جوانوں کی بروقت کاروائی کی وجہ سے حملہ آوروں قافلے سے 20میٹر دور پھٹا ۔ آج بروز جمعہ شام گوادر میں ایسٹ بے ایکسپریس وے پر ایک بزدلانہ حملے میں پاکستان آرمی اور پولیس کے دستوں کی مربوط سیکورٹی کے ہمراہ چار گاڑیوں پر مشتمل چینی شہریوں کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا۔

یہ واقعہ فشر مین کالونی کے قریب کوسٹل روڈ پر پیش آیا۔ چینی شہریوں کی گاڑیوں کا قافلہ جب فشر مین کالونی کے قریب پہنچا تو ایک نوجوان کالونی سے باہر بھاگا ہوا آیا، خوش قسمتی سے سادہ لباس میں پاکستان آرمی کے جوانوں نے اس نوجوان کو روکنے کی کوشش کی جس نے قافلے سے 15 سے 20 میٹر کے فاصلے پر اپنے آپ کو دھماکہ سے اڑا دیا۔ دھماکہ کے نتیجہ میں ایک چینی شہری زخمی ہوا، چینی شہری کی حالت ٹھیک ہے اور اسے قریبی گوادر ہسپتال میں منتقل کر دیا گیا ہے۔ بدقسمتی سے جائے وقوعہ پر کھیلنے والے دو معصوم بچے جاں بحق ہوئے جبکہ دیگر دو بچے شدید زخمی ہوئے جنہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

وزارت داخلہ کی طرف سے کہاگیا کہ پاکستان اور چین تبدیل ہوتے ہوئے علاقائی حالات میں اپنے شہریوں کی ترقی اور خوشحالی کیلئے باہمی تعاون کو لاحق خطرات سے با خبر ہیں۔ حکومت پاکستان پہلے ہی اپنے چینی بھائیوں کی سیکورٹی کا جامع جائزہ لے رہی ہے اور ترقی کے اس سفر میں پاکستان میں ان کے محفوظ قیام کو یقینی بنانے کے لئے پرعزم ہے۔ ہم اپنے چینی بھائیوں کو درپیش ان خطرات سے جامع طور پر نمٹنے کا اعادہ کرتے ہیں۔ اپنے چینی بھائی کے زخمی ہونے اور پاکستانی بچوں کی جانوں کے ضیاع پر ہم غمزدہ ہیں۔ دونوں ممالک اپنے تعاون اور دوستی کو کمزور کرنے والے عناصر کو شکست دینے کے لئے ایک دوسرے کے ساتھ مضبوطی سے کھڑے ہیں۔