امریکہ میں پائلٹ ریٹائرمنٹ کی عمر 67 سال مقرر

0
29
Pilot

امریکہ کے ایوان میں وہاں کی ایوی ایشن کیلئے ایک بل منظور کیا گیا ہے جس میں کمرشل پائلٹ کی ریٹائرمنٹ کی عمر 65 سے 67 سال مقرر کی گئی ہے جبکہ روئٹرز کی خبر کے مطابق امریکی ایوان نمائندگان نے جمعرات کے روز ایک قانون سازی کی منظوری دی ہے جس کے تحت کمرشل پائلٹوں کی ریٹائرمنٹ کی لازمی عمر 65 سال سے بڑھا کر 67 سال کر دی جائے گی اور ایوی ایشن میں دیگر اصلاحات کی جائیں گی۔


ریپبلکن پارٹی کی زیر قیادت ایوان نمائندگان میں اس بل کی منظوری کے لیے 69 کے مقابلے میں 351 ووٹ پڑے جو امریکی فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن (ایف اے اے) کے ایوی ایشن سیفٹی اور انفراسٹرکچر پروگراموں کو اگلے پانچ سالوں کے لیے دوبارہ اختیار دے گا۔ ایئر لائن پائلٹس ایسوسی ایشن نے کہا ہے کہ ریٹائرمنٹ کی عمر بڑھانے سے ایئرلائن شیڈولنگ اور پائلٹوں کی تربیت کے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں.
مزید یہ بھی پڑھیں؛
بھارت،خواتین کی برہنہ پریڈ کروانے والا گرفتار،سپریم کورٹ کا نوٹس
روپے کی قدر میں 0.47 فیصد کی تنزلی ریکارڈ
عمران خان کی مشکلات میں کمی نہ ہو سکی، ایک اور جے آئی ٹی نے 21 جولائی کو طلب کر لیا۔
عراق؛ سویڈن سفارتخانہ نذرآتش، قرآن کی بے حرمتی پر سفیر کو نکلنے کا حکم
عالمگیر ترین کی موت بارے فرانزک رپورٹ جاری
علاوہ ازیں پائلٹوں کے معاہدوں کو دوبارہ کھولنے کی ضرورت ہوسکتی ہے۔ موجودہ بین الاقوامی قوانین اب بھی 65 سال سے زیادہ عمر کے پائلٹوں کو امریکہ سے باہر زیادہ تر ممالک میں پرواز کرنے سے روکتے ہیں۔ ریجنل ایئر لائن ایسوسی ایشن نے پائلٹوں کی عمر میں اضافے کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے "زیادہ تجربہ کار کپتانوں کو برقرار رکھنے کی اجازت ملتی ہے، جو بدلے میں نئے فرسٹ افسران کے ساتھ پرواز کر سکتے ہیں اور ان کی رہنمائی کر سکتے ہیں، جس سے ملازمت چھوڑنے میں مدد ملتی ہے۔ وائٹ ہاؤس نے رواں ہفتے کہا تھا کہ اس نے ایوان نمائندگان کے بل کی مخالفت کی ہے۔

Leave a reply