fbpx

عوامی نیشنل پارٹی ایک بار پھر بلوچستان حکومت کاحصہ بن گئی

کوئٹہ: بی اے پی کے وفد کی عبدالقدوس بزنجو کی قیادت میں رکن اسمبلی سید احسان شاہ کی رہائش گاہ آمد

باغی ٹی وی : تفصیلات کے مطابق سید احسان شاہ نے یقین دہانی کرائی کہ عبدالقدوس بزنجو کے ساتھ ہیں امید کرتے ہیں ایک نئی حکومت ایک مثالی حکومت ہوگی کوئٹہ۔صوبے کے عوام کے مسائل کو حل کرنا نئی حکومت کی ترجیحات ہونی چاہیے۔

علاوہ ازیں عوامی نیشنل پارٹی بھی بلوچستان حکومت کا ایک بار پھر حصہ بن گئی ہے بلوچستان عوامی پارٹی کے قدوس بزنجو ‘ظہور بلیدی اور دیگر سے ملاقات کے بعد اے این پی بلوچستاننے بی اے پی کی حمایت کا اعلان کر دیا ہے-

قبل ازیں گزشتہ روز کوئٹہ میں چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی،وفاقی وزیر پرویز خٹک، سردار یار محمد رند و دیگر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلوچستان کی ترقی وخوشحالی کے لیے پی ٹی آئی کی اتحادیوں کے ساتھ ہمدردیوں کوپھر دہرایا-

بلوچستان کی ترقی،خوشحالی کے لیے ہم حاضر:سنجرانی ، خٹک اور یار محمد رند بول اٹھے

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے یار محمد رند نے کہا کہ پی ٹی آئی ارکان کو ایسا لگا کہ انکو نظرانداز کیا جارہا ہے، پی ٹی آئی اراکین نے مجھے وزیراعلی اور بابر موسی خیل کو اسپیکر کیلئے نامزد کیا،باپ پارٹی حکام آپس میں بیٹھ کر فیصلے کرتے ہیں،اتحاد کو چلانے کیلئے قربانیاں دی جاتی ہیں،استعفی دینے کے بعد بھی صوبائی حکومت کو غیر مستحکم نہیں کیا امید ہے کہ باپ ہمارے ساتھ سابق رویہ اختیار نہیں رکھے گی،پارٹی کا فیصلہ ہے ماننا پڑے گا ہم نے مل کر بلوچستان کو چلانا ہے، ہم نے بلوچستان کو ترقی دینی ہے-

وفاقی وزیر پرویز خٹک نے کہا کہ پی ٹی آئی نے پہلے بھی باپ پارٹی کو سپورٹ کیا،اب بھی کرے گی ، بلوچستان کی ترقی کے لیے کوئی ایک قدم آگے بڑھے گا تو پی ٹی آئی دس قدم آگے آئے گی صوبے میں بننے والی نئی حکومت پی ٹی آئی کا خیال رکھے گی،پی ٹی آئی اراکین کو نظرانداز کرنا برداشت نہیں،سابق حکومت نے پی ٹی آئی کو وہ حیثیت نہیں دی تو جو انکا حق تھا،سردار رند نے ہمیں عزت دی-

باپ پارٹی کے سنیئر رہنما ظہور بلیدی نے کہا کہ سردار رند نے ہمیشہ ہمارا ساتھ دیا،بڑے ہونے کی حیثیت سے ہم نے ہمیشہ ان سے قربانی لی،باپ پارٹی نے سردار رند کو مختلف جگہوں پر نظرانداز کیا،

سابق وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کووزارت اعلیٰ سے محروم کرنے والے مرکزی کردار عبدالقدوس بزنجو نے کہا کہ سردار رند ہمارے بڑے اور قبائلی حیثیت رکھتے ہیں،مل کر بلوچستان میں اچھی حکومت بنائیں گے،سردار رند باہر تھے جس کی وجہ سے ہم نہیں مل سکے

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!