ایوبیہ نیشنل پارک میں برطانوی دور کی 130 سالہ پُرانی سرنگ دریافت

ایوبیہ نیشنل پارک میں برطانوی دور کی 130 سالہ پُرانی سرنگ دریافت-

باغی ٹی وی : حال ہی میں برطانوی دور کی 2 وادیوں کو جوڑنے والی سرنگ جو پائپ لائن واک سے بالکل دور ایوبیہ نیشنل پارک میں کوڑے کے ڈھیر کے نیچے دریافت کی گئی ہے سرنگ کو وزارت موسمیاتی تبدیلی نے خوبصورتی سے بحال کیا ہے۔

اس سرنگ کو کے پی ڈی فاریسٹ اینڈ وائلڈ لائف ڈیپارٹمنٹ نے یو این ڈی پی اور وزارت موسمیاتی تبدیلی کے اشتراک سے مرمت کیا ہے اس سرنگ کی دریافت نے بر طانوی دور میں بننے والے یہ خوبصورت اور سرسبز نیشل پارک کی خوبصورتی مین اور اضافہ کر دیا ہے-

یہ ٹینل 1891 میں برطانوی دور میں ایوبیہ سے ڈونگا گلی اور مری کا سفر کم کرنے کے لئے بنائی گئی مگر لاپرواہی اور وقت کی گرد میں ایسی کھوئی کہ اس کا نام و نشان ہی کچرے میں دب گیا تھا-

وہاں موجود ورکرز نے بتایا کہ جب پودوں کے لئے کھدائی کر رہے تھے تو ہمیں 1891 کا بورڈ ملا وہاں تک کوڑا بھرا ہوا تھا تو کوڑے کوہٹا یا گیا تو اس کے نیچے سے یہ اتنا خوبصورت اور تاریخی اور نیشنل ٹینل ملا –

130 سالہ پُرانی بھاری پتھروں سے بنی اس سرنگ کی اپنی لمبائی تو صرف دو سو پچاس فٹ ہے لیکن اس نے ایوبیہ سے مری اور دونگا گلی کا راستہ کئی کلو میٹر کم کر دیا ہے کچرے میں سے 130 سالہ پُرانا راستہ تو دریافت کر لیا گیا-

اس سرنگ کو عوام اور سیاحوں کے لئے بھی کھول دیا گیا ہے حال ہی میں وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے اس کا افتتاح کیا ہے-

امین اسلم نے تقریب میں گفتگو کرتے ہوئےکہا کہ ملک میں ماحولیاتی سیاحت کے فروغ کے لئے یہ ایک عظیم اقدام ہے۔

انہوں نے تقریب میں تقریر کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ لوگ یہاں سیر یا ٹریکنگ کے لئے بھی آسکتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.