ضمنی انتخابات میں مریم نواز کا جادو کیسے چلا؟ اہم انکشافات

0
667
ml

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سینئر صحافی و اینکر پرسن مبشر لقمان نے کہا ہے کہ کوئی مانےیا نہ مانے، کسی کو اچھا لگے یا برا، پاکستان میں ضمنی انتخابات کا میلہ لٹ چکا، فتح کا تاج مسلم لیگ ن کے سر ہے، حقیقت کو جھٹلایا نہیں جا سکتا،پنجاب کا شمار سب سے بڑے صوبے کا ہوتا ہے،پنجاب مسلم لیگ ن کا سیاسی قلعہ اور مرکز رہا ہے، 2018 کے انتخابات میں تحریک انصاف کی جانب سے ن لیگ کے اس قلعے میں شگاف ڈالے گئے لیکن بزدار کے ہاتھ میں دے کر صوبہ پاؤں پر کلہاڑی ماری گئی، وہ روایتی سیاست سے بے خبر تھے،بزدار کی خراب اور فرسودہ کارکردگی تحریک انصاف کی غلطی ثابت ہوئی

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ موجودہ ہار کے پیچھے ن لیگ کی کارکردگی اور تحریک انصاف کی نااہلی کا یکساں ہاتھ ہے، جنرل انتخابات کے بعد کسی وزیراعلیٰ کے عملی کام نظر آئیں گے تو وہ صرف مریم نواز کے آئیں گے، ایئر ایمبولینس کاکام کیا تو تنقید کی گئی،رمضان پیکج پر تنقید کی گئی تاہم وہ لاکھوں گھرانوں میں راشن پہنچانے میں کامیاب ہوئیں ، تحریک انصاف کی کارکردگی مایوس رہی، بیانیہ عوامی مسائل نہیں صرف عمران خان کی رہائی ہے،عوامی مسائل کو نظر انداز کرتے ہیں تو عوام نظر انداز کر دیتی ہے، حقیقت میں تحریک انصاف حکومت میں ہو یا اپوزیشن میں وہ اپنی سیاست کا بیڑہ غرق کرنے کے لئے کوئی نہ کوئی بزدار ڈھونڈ لیتی ہیں

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ ایک وقت تھا کہ مریم نواز انتخابات لڑنے کے لئے اہل نہیں تھیں،اور اب وہ پاکستان کی تاریخ میں کسی بھی صوبے کی پہلی خاتون وزیراعلیٰ بن چکی ہیں، وہ شریف خاندان کی چوتھی شخصیت وزیراعلیٰ ہیںَ حالات بتا رہے کہ نواز شریف کی سیاسی میراث کی اصل وارث مریم ہی ہوں گی جس کی انہوں نے قیمت بھی ادا کی ہے والد کے پانامہ کیس میں ہٹائے جانے کے بعد سات سال قبل مریم نے سیاست میں انٹری ماری، حالیہ انتخابات میں مریم نے انتخابی سیاست میں قدم رکھا،اس دوران چیف آرگنائزر بھی بنیں، جیل بھی گئیں،اور انتخابی مہم بھی چلائی،عمران خان نے مینار پاکستان پر جلسہ کیا اور نوجوانوں کو جمع کر کے سب کو حیران کیا، اس اثر کو زائل کرنے کے لئے مریم کو میدان میں لانا پڑا،مریم نے سوشل میڈیا، میڈیا پر توجہ مرکوز کی، مریم نے جارحانہ انداز اپنایا ہوا تھا انکے بارے یہ تاثر ہے کہ انکو مشکل فیصلے کرنے آتے ہیں وہ ماضی میں اسٹیبلشمنٹ کی پسندیدہ نہیں رہیں، مریم کے لئے پنجاب کی وزارت اعلیٰ پھولوں کی سیج نہیں انکو ثابت کرنا ہو گا کہ وہ بزدار نہیں، مریم اصول کی بات کرتی ہیں، ڈکٹیشن نہیں لیتی، ضمنی انتخابات کی بات کی جائے توسوشل میڈیا دیکھ کر لگ رہا تھا کہ تحریک انصاف جیت جائے گی تا ہم ن لیگ اور اتحادیوں نے میدان مار لیا،تحریک انصاف اس کو دھاندلی کا شاخسانہ قرار دے رہی ہے، دس سیٹوں پر صوبائی میں ن لیگ جیتی، پرویز الہیٰ اور مونس الہیٰ کو بدترین شکست ہوئی،پاکستان میں ہر الیکشن میں دھاندلی کے الزامات سننے کو ملتے ہیں،انٹرنیٹ بندش کے الزامات سامنے آ رہے ہیں کسی بھی جگہ حکومتی وزرا نے جلسوں سے خطاب نہیں کیا ،ترقیاتی منصوبے نہیں چلے، ن لیگ اپنے کارکنان کو نکالنے میں کامیاب رہی تا ہم تحریک انصاف کے ووٹر اس ضمنی الیکشن میں گھر میں‌رہے، سوشل میڈیا پر بھی کوئی خاص مہم نہیں تھی،

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ مریم نواز اپنے منصب کا دفاع کرنے میں کامیاب ہو گئی ہیں، پاکستان کی سیاسی تاریخ میں ضمنی انتخابات کو بڑا معرکہ سمجھا جاتا ہے، موجودہ الیکشن میں خاموشی ضرور رہی ہے لیکن نتائج بیانیے کی تردید کرتے ہیں، ضمنی الیکشن ایک ٹیسٹ کیس تھا جس میں ن لیگ کامیاب ہو گئی،حکومت میں آنے کے بعد ووٹر کو ایک امید کی کرن نظر آئی، جس طرح رمضان میں چیک اینڈ بیلنس رکھا گیا پنجاب میں، وزارت اعلیٰ کا حلف لینے کے بعد مریم نے جس طرح عوامی فلاح کے منصوبوں پر کام شروع کیا، مفت وائی فائی، ہسپتالوں کے دورے، مستحق طلبا کو مالی امداد،اعلیٰ تعلیمی اداروں میں جانے کے مواقع، سود سے پاک قرضے، ہنرمندتربیت، الیکٹرک بائیکس فراہم کرنے کے منصوبے، یہ سب لوگ سن رہے ہیں اور دیکھ رہے ہیں،

بچ کر رہنا،لڑکی اور اشتہاریوں کی مدد سے پنجاب پولیس نے ہنی ٹریپ گینگ بنا لیا

مہنگائی،غربت،عید کے کپڑے مانگنے پر باپ نے بیٹی کی جان لے لی

پسند کی شادی کیلئے شوہر،وطن ،مذہب چھوڑنے والی سیماحیدر بھارت میں بنی تشدد کا نشانہ

بلیک میلنگ کی ملکہ حریم شاہ کا لندن میں نیا”دھندہ”فحاشی کا اڈہ،نازیبا ویڈیو

بحریہ ٹاؤن،چوری کا الزام،گھریلو ملازمین کو برہنہ کر کے تشدد،الٹا بھی لٹکایا گیا

بحریہ ٹاؤن کے ہسپتال میں شہریوں کو اغوا کر کے گردے نکالے جانے لگے

سماعت سے محروم بچوں کے لئے بڑی خوشخبری

Leave a reply