ایسوسی ایشن آف فارمرآئی جیزآف پولیس کےتحت پولیس کودرپش مسائل کےحل کےلیےمشاورتی کانفرنس

0
47

کراچی :ایسوسی ایشن آف فارمر آئی جیز آف پولیس(AFIGP) کے ذیر انتظام ششم سالانہ کانفرنس بعنوان ٹیکنالوجی کے ڈریعے پولیسنگ میں اصلاحات کا انعقاد گارڈن پولیس ہیڈکوارٹرز ساؤتھ کے میوزیم میں کیا گیا۔

اجلاس میں آئی جی پی سندھ سمیت سابقہ آئی جیز نے شرکت کی اور عنوان کے لحاظ سے اپنے اپنے خیالات اور ماہرانہ رائے پر مشتمل تجاویز پیش کیں۔

سالانہ کانفرنس کے اس انعقاد کا مقصد پولیس کو درپیش نت نئے چیلنجز سے نمٹنے کے لیئے حکمت عملی و لائحہ کوٹیکنالوجی کے استعمال سے اپ گریڈ کرنا اور بہتر بنانا ہے۔

سندھ پولیس اور اے ایف آئی جی پی کے اشتراک سے منعقدہ اس کانفرنس کے مہمان خصوصی آئی جی سندھ غلام نبی میمن نے اپنے خطاب میں کہا کہ ٹیکنالوجی کا استعمال اسوقت ہر اس اہم شعبے کے لیئے ایک ضرورت بن چکا ہے جسکا براہ راست تعلق مفاد عامہ سے ہے۔سندھ پولیس کو اس امر کا بخوبی اداراک پہلے ہی سے تھا کہ پولیسنگ میں جدید تیکنیکس کے استعمال سے نا صرف نتائج کو بہتر بنایا جاسکتا ہے بلکہ اس عمل سے نئی نئی جہتیں بھی متعارف کرائی جاسکتی ہیں۔
سندھ پولیس کا انفارمیشن ٹینالوجی کا شعبہ اور اسکا قیام دور جدید میں سندھ پولیس کے داخل ہونیکی بین مثال ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پوائنٹ می ایپ سے ہم نے سندھ پولیس کے حاضری کے نظام کو اپ گریڈ کیا اور اسے ہر لحاظ سے ثمر آور پایا۔اسی طرح ڈرائیونگ لائنس ایپ کی بدولت ڈرائیونگ لائسنس کے لیئے درخواستوں کے عمل سمیت فراہمی کو بھی ٹیکنالوجی کی مدد سے مذید بہتر کیا۔ان کا کہنا تھا کہ سندھ پولیس کے ملازمین کے ڈیٹا کو محفوظ بنانیکے ساتھ ساتھ انھیں دی جانیوالی سزاؤں اور عمدہ کارکردگی کے ریکارڈ کو بھی جدید نظام کے تحت محفوظ اور مؤثر بنایا جاچکا ہے۔

غلام نبی میمن کا کہنا تھا کہ تلاش ایپ ڈیواسز کی مدد سے اب جرائم میں ملوث ملزمان اور قانون پسند شہریوں کی شناخت انتہائی آسان اور نتیجہ خیز ہوگئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ سندھ کے تمام ٹال پلازہ پر چہرہ شناس کیمروں کی تنصیب کے اقدامات اتھانیکے علاوہ موبائل مارکیٹس ایسوسی کے اشتراک سے ایک ایسی ایپ کو متعارف کرانیکا عمل بھی ذیر غور ہے جسکی مدد سے چھینے گئے اور چوری شدہ موبائل کی ٹریسنگ اور شناخت کو یقینی بنایا جاسکے گا۔

تقریب میں شریک سابقہ آئی جی سندھ سید کلیم امام نے کہا کہ ٹیکنالوجی استعمال کامیابی کا راستہ ہے ابتداء میں مشکلات ضرور پیش آتی ہیں تاہم وقت گذرنے کیساتھ ساتھ یہ عمل بتدریج بہتری کی طرف جاتا ہے لۂذٰا پولیسنگ کے عمل میں جدید ٹیکنالوجی کا ہونا اب ایک ضرورت بن چکا ہے۔بعداذاں کانفرنس سے ڈی آئی جی آئی ٹی،ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے،معروف جامعات کے پروفیسر حضرات،ماہرین و دیگر معروف شخصیات نے بھی خطاب کیا۔

 

عمران خان کے صاحبزادوں قاسم اور سلیمان کی زمان پارک آمد 

شوکت خانم کے باہر سے مشکوک شخص گرفتار

جس کو پنجاب کا سب سے بڑا ڈاکو کہتا تھا اسے ڈاکو کی وزارت اعلیٰ کے نیچے عمران خان پر حملہ ہوا

 

 

 

Leave a reply