ورلڈ ہیڈر ایڈ

چیئر پرسن ڈیفنس آف ہیو مین رائٹس کی ڈی جی آئی ایس پی آر ملاقات .لاپتہ افراد پر بات چیت

راوالپنڈی:چیئرپرسن ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کی ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر سے ملاقات ،ملاقات میں پاکستان سے لاپتہ افراد کے حوالے سے گفتگو ہوئی .اس ملاقات میں ڈی جی آئی ایس پی آر نے ڈیفنس ہیومن رائٹس کی چیئر پرسن کو بتایا کہ لاپتہ ہونے والے افراد میں کوئی افغانستان میں ہے اور کئی افراد ٹی ٹی پی میں شامل ہوچکے ییں.

ڈی جی آئی ایس پی آر نے چیئر پرسن ڈیفنس آف ہیومن رائٹس کو بتایا کہ یہ لاپتہ افراد پاکستان میں نہیں اس کے باوجودان کا الزام پاکستان پر لگایا جاتا ہے .ڈی جی آئی ایس پی آر نےکہا کہ ہر لاپتہ شخص کی گمشدگی کو ریاست سے جوڑنے کی سازش کی جاتی ہے یہ سرا سر غلط ہے. افواج پاکستان کے تعلقات عامہ کی طرف سے یہ کہا گیا ہے کہ لاپتہ افراد کے حوالے سے جو غلط خبریں پھیلائی جارہی ہیں وہ سرا سر غلط ہیں

چیئر پرسن ڈیفنس ہیومن رائٹس آمنہ جنجوعہ نےریاست،سیکیورٹی اداروں کی کوششوں،ہمدردیوں کوتسلیم کیا.جو افراد ریاست کے پاس ہیں وہ قانونی عمل سےگزر رہے ہیں.ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ہمارے دل لاپتا افراد کے اہل خانہ کے ساتھ دھڑکتے ہیں .ڈی جی آئی ایس پی آر کے موقف کی تائید کرتے ہوئےآمنہ مسعود جنجوعہ نے کہ کہ غیر ریاستی عناصرکومتاثرہ خاندانوں کا استحصال کرنے نہیں دیناچاہیے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.