fbpx

دپیکا اور نواز الدین صدیقی کے ساتھ وائرل تصاویر پر شہریار منور کی وضاحت

پاکستان کے معروف اداکار شہریار منورکا حال ہی میں بالی وڈ اداکارہ دپیکا پڈوکون اور نوازالدین صدیقی کے ہمراہ وائرل ہونے والی اپنی تصاویر پر وضاحتی بیان سامنے آیا ہے انہوں نے واضح کیا ہے کہ وہ نہ تو با لی وڈ اداکارہ دپیکا پڈوکون کے ہمراہ کسی منصوبے میں ایک ساتھ کام کرنے جا رہے ہیں اور نہ ہی وہ نوازالدین صدیقی کے پاؤں پڑے تھے۔

باغی ٹی وی : شہریار منور کی تصاویر اور ویڈیوز پر صارفین نے منفی تبصرے کئے تھے جس پر شہریار صدیقی نے وضاحت کرتے ہوئے برہمی کا اظہار کیا ہے اداکار ’فوچیا میگزین‘ کے ساتھ بات کرتے ہوئے اس بات پر برہمی کا اظہار کیا کہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں ایوارڈز تقریب کے دوران ان کی ذاتی ویڈیوز اور تصاویر بناکر انہیں غلط انداز اور رنگ میں شیئر کرکے وائرل کیا گیا۔


شہریار منور نے بتایا کہ ان کی اور دپیکا پڈوکون کی ملاقات حادثاتی طور پر ہوئی تھی، وہ جن دوستوں سے ملنے گئے تھے، ان سے ملنے کے لیے دپیکا پڈوکون بھی وہاں آئی اور پھر ان دونوں کے درمیان بطور فنکار نہیں بلکہ ایک عام انسان گفتگو ہوئی۔

شہریار منور نے بتایا کہ وہ دبئی میں فلم فیئر ایوارڈز میں شرکت کے لیے گئے تھے، جہاں انہیں ان کی مختصر فلم ’پرنس چارمنگ‘ پر ایوارڈ دیا گیا مگر کسی بھی ویب سائٹ نے اس متعلق کوئی خبر نہیں دی۔

انہوں نے بتایا کہ دپیکا پڈوکون کے ساتھ ان کی تصاویر وائرل کرکے ان دونوں سے متعلق غلط باتیں پھیلانا شروع کی گئی تھیں، جس پر انہوں نے اپنی پی آر ٹیم کی خدمات حاصل کرکے بہت ساری جگہوں سے وہ تصاویر ڈیلیٹ کروادیں۔

شہریار منور کے مطابق ان کی اور دپیکا پڈوکون کی ملاقات ذاتی تھی اور ان کی پرائیویسی میں مداخلت کرکے ان کے لیے مسائل پیدا کرنے کی کوشش کی گئی انہوں نے کہا کہ دپیکا پڈوکون کے ساتھ تصویر وائرل ہونے سے ان سمیت بولی وڈ اداکارہ کے ساتھ بھی کوئی مسئلہ ہوسکتا تھا دپیکا کے ساتھ کسی بھی فلم یا دوسرے منصوبے میں کام نہیں کرنے جا رہے، بس وہ اتفاقی ملاقات تھی، جسے غلط رنگ دیا گیا۔

شہریار منور کے مطابق انہوں نے نوازالدین صدیقی کے پاؤں احترامًا اور اپنی سندھی روایات کے مطابق چھوئے، کیوں کہ سندھی روایات کے مطابق جس شخص کا احترام کیا جاتا ہے، انہیں ہاتھ جوڑ کر اور ان کے پاؤں چھوکر ان کی عزت کی جاتی ہے۔


انہوں نے بتایا کہ وہ اور ماہرہ خان جب نوازالدین صدیقی کے ساتھ گفتگو کر رہے تھے تو ماہرہ نے ان سے مذاق میں کہا کہ نوازالدین صدیقی مرشد ہیں، ان کے پاؤں چھوئیں، جس پر انہوں نے بھی مذاق مذاق میں ان کے پاؤں پر ہاتھ رکھے اور سوشل میڈیا پر 30 منٹ کی گفتگو میں صرف اسی منظر کو وائرل کیا گیا۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!