ہر بارفرد جرم عائد ہونے کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کی مقبولیت میں مزید اضافہ ہوا،برطانوی اخبار

ڈونلڈ ٹرمپ سے بہتر ”مظلوم“ کا کارڈ کوئی نہیں کھیل سکتا۔
0
37
america

برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ فرد جرم عائد ہونے کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کی مقبولیت میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

باغی ٹی وی: سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر 2020 کے صدارتی انتخابات کے نتائج میں ردو بدل کرنے کی کوششوں اور کیپیٹل ہل میں بغاوت کو ہوا دینے جیسے جرائم کے الزامات پر وفاقی محکمہ انصاف کی طرف سے 3 فرد جرم عائد کی گئی ہیں اخبار ”دی گارڈین“ نے دعویٰ کیا ہے کہ ٹرمپ دو بار مواخذہ سے گزر چکے ہیں اور تین بار ان پر فرد جرم عائد کی جاچکے ہیں، لیکن ان کی حمایت کی بنیاد مضبوط ہے۔

درحقیقت، قانون کی عدالت میں ہر ایک منفی رائے عامہ کی عدالت میں مثبت میں ترجمہ کرتا ہے۔ وہ ریپبلکن ووٹروں میں ایک غالب شخصیت ہیں جو اپنا خیال رکھتے ہیں کہ ڈیموکریٹ جو بائیڈن کی مدد کرنے پر تلے ہوئے انصاف کے نظام کے ذریعہ انہیں غیر منصفانہ طور پر نشانہ بنایا جارہا ہے۔

اے آئی ٹیکنالوجی،بل گیٹس نے لاکھوں اموات کی وجہ بننے والے نظام کی پیشگوئی کر …

دراصل ریپبلکن ووٹرز میں یہ تاثر موجود ہے کہ ٹرمپ کو انصاف کے نظام کے ذریعہ مخالف جماعت ڈیموکریٹس کی جانب سے انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے کیلیفورنیا میں ہوور انسٹی ٹیوشن تھنک ٹینک کے ایک پالیسی فیلو بل وہیلن کہتے ہیں کہ جتنی زیادہ فرد جرم ہوں گی، ان کے پول نمبرز اتنے ہی بہتر ہوں گے یہ انتہائی مضحکہ خیز ہے، وہ امریکی سیاست میں سب سے نمایاں بدمعاش ہے، ڈونلڈ ٹرمپ سے بہتر ”مظلوم“ کا کارڈ کوئی نہیں کھیل سکتا۔

اس سے قبل جرائم یا اسکینڈل کی ذرا سی بھی بھنک سیاست دان کے کیریئر کے خاتمے کا باعث بنا کرتی تھی اس کی مثالیں بھی موجود ہیں، جیسے کہ صدر رچرڈ نکسن نے واٹر گیٹ اسکینڈل پر استعفی دیا نائب صدر سپیرو اگنیو نے رشوت ستانی، ٹیکس چوری اور سازش کے الزامات کے بعد استعفی دیا۔ غیر ازدواجی تعلقات کے الزامات کی وجہ سے گیری ہارٹ کی صدارتی مہم ختم ہو گئی۔ اور اسی طرح انتھونی وینر نے سیکسٹنگ اسکینڈلز کے ایک سلسلے کے بعد کانگریس سے استعفی دیا۔

پاکستان میں انتخابات میں تاخیر ہو سکتی ہے،غیر ملکی ماہرین

لیکن ٹرمپ نے سیاسی طبیعیات کے قوانین کی دھجیاں اڑا دی ہیں انہوں نے ریاستی اور وفاقی الزامات کو اپنے ہی حق میں پلٹ دیا ہے اور خود کو سیاسی شہید کے طور پر پیش کیا ہےاپنی ریلیوں میں وہ مقدمات کو نہ صرف خود پر بلکہ ان کے حامیوں پر حملے کے طور پر پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے پچھلے ہفتے پنسلوانیا میں ایک ہجوم سے خطاب میں کہا کہ وہ مجھ پر فرد جرم عائد نہیں کر رہے ، وہ آپ پر فرد جرم عائد کر رہے ہیں-

ایک تجربہ کار ریپبلکن اسٹریٹجسٹ اور ٹرمپ مخالف گروپ لنکن پروجیکٹ کے شریک بانی رِک ولسن نے کہاکہ جب بھی اس پر فرد جرم عائد کی جاتی ہے، اس کے ریپبلکن ووٹروں کی تعداد بڑھ جاتی ہے مجھے ابھی کوئی راستہ نظر نہیں آرہا ہے جہاں ریپبلکن بیس ووٹرز اچانک بیدار ہوں اور کہیں، ‘واہ، یہ ایک برا آدمی ہے اور ہم اپنی سوچ بدلنے جا رہے ہیں، ہم کرس کرسٹی یا رون کو ووٹ دینے جا رہے ہیں۔ DeSantis.’ یہ سب اپنے لیے مقدمہ بنانے میں بنیادی سطح پر ناکام رہے ہیں کیونکہ اگر وہ اس پر حملہ کرتے ہیں تو انہیں سزا دے گا۔

چئیرمین پی ٹی آئی کی گرفتاری پر امریکا کا بیان

جارجیا کی کانگریس وومن مارجوری ٹیلر گرین نے ٹوئٹر پرلکھا کہ وہ "ٹرمپ کو ووٹ دیں گی چاہے وہ جیل میں ہی کیوں نہ ہوں، اس کے امکانات کو تباہ کرنے سے بہت دور، بہت سے مبصرین کا خیال ہے کہ، امریکی جمہوریت کو کمزور کرنے میں اس کے مبینہ کردار کے لیے تازہ ترین اور انتہائی سنگین الزام ممکنہ طور پر 2024 میں ریپبلکن پارٹی کی صدارتی نامزدگی کی طرف مارچ کو ہوا دے گا۔

Leave a reply