fbpx

آٹے کی قیمت میں 24 گھنٹوں میں 10 روپے فی کلو اضافہ

کراچی:شہرقائد میں آٹے کی فی کلو قیمت میں 10 روپے کا اضافہ ہوگیا ہے، اور چکی کے آٹے کی فی کلو قیمت تاریخ کی بلندترین سطح 160 روپے تک جا پہنچی ہے۔دوسری طرف حکومت عوام کودووقت کی روٹی کےلیے آٹا فراہم کرنے میں ناکام نظرآرہے ہے،سندھ حکومت کےلیے آٹے کی قیمت کنٹرول کرنا بھی مشکل دکھائی دے رہاہے

آٹامہنگا،سندھ میں گندم کی بین الصوبائی نقل وحرکت پرپابندی

کراچی میں آٹے کا بحران بڑھتا جارہا ہے، اوردوسری طرف آٹے کی قیمت میں 24 گھنٹے میں 10 روپے اور صرف پانچ دن میں 30 روپے فی کلو کے ہوشربا اضافے نے عوام کی کمر توڑ دی ہے۔

گندم کی فی کلو قیمت 135 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی ہے، چکی کے آٹے کی فی کلو قیمت تاریخ کی بلندترین سطح 160 روپے تک جا پہنچی ہے، جب کہ فائن اور مل کا آٹا بھی مہنگا ہوکر 145 روپے فی کلو سے سے تجاوز کرگیا ہے۔

سرکاری سبسڈائزڈ آٹا بلیک میں فروخت

آٹے کی قیمت میں 24 گھنٹے میں 10 روپے فی کلو کا اضافہ ہوا ہے، جب کہ جنوری کے5 دن میں آٹے اور گندم کی قیمت میں 30 روپےفی کلو کا اضافہ ہوا ہے۔

گوجرہ:یوٹیلیٹی سٹوروں سے آٹا،گھی اوردیگرسبسڈائزڈ اشیاء،ہوٹلوں،بیکریوں اورکریانہ…

سستے آٹے کے حصول کیلئے عوام سڑکوں پر دربدر ہو رہے ہیں، سندھ حکومت کی جانب سے سستا آٹا اسٹال لگائے جارہے ہیں، لیکن جب کسی مقام پر سستا آٹا فروخت کیا جاتا ہے تو عوام ٹوٹ کر پڑتے ہیں، اور ایک دوسرے سے ہاتھا پائی کرتے دکھائی دے رہے ہیں۔