حسین حقانی بھارت کے پاکستان مخالف ایجنڈے کو کیسے پورا کرتا رہا ، رپورٹ

0
57

حسین حقانی بھارت کے پاکستان مخالف ایجنڈے کو کیسے پورا کرتا رہا ، رپورٹ

باغی ٹی وی رپورٹ کے مطابق . بھارت کے جعلی اور فیک میڈیا سیل کا دنیا بھر کو علم ہونے کے بعد کئی ایک رازوں سے پردے اٹھ رہے ہیں. بھارت کا مذموم مقاصد کے لیے پاکستان مخالف چلایا جانےوالا نیت ورک انڈیا کرونیکل میں پاکستان کے امریکی میں‌ سابق سفیر حسین حقانی کے بارے بھی انکشافات ہوئے ہیں کہ وہ کیسے بھارت کے اس پراپیگنڈے کا حصہ تھا اور عالمی طاقتیں بھی اس کی سرپرستی کرتی تھیں۔
حسین حقانی کو پاکستان کی افوج کے خلاف امریکہ میں بھارت کی ایما پر مشکوک سرگرمیوں‌ کی وجہ سے سزا بھی دی جاچکی ہے اور عدالت نے اسے غدار قرار دیا ہے. 2008 میں حسین حقانی پاکستان کی فوج کے خلاف ایک بڑی سازش میں ملوث بھی پایا گیا جس کو اداروں نے ناکام بنا دیا تھا ۔


پچھلے دنوں امریکہ میں پاکستان کے سابق سفیرحسین حقانی نے پاکستان کےخلاف زہراگلا تھا ۔بھارت میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے حسین حقانی نے کہاکہ بھارت نے بنگلہ دیش کوپاکستان سے آزادی دلوائی ۔بھارت نے بنگلہ دیش میں فوج بھیج کروہاں کے لوگوں کی مددکی۔بنگلہ دیش پرقبضہ کرنے والی فوج (پاک فوج )کوسرنڈر کرنے پرمجبورکردیا۔

واضح رہے کہ واضح رہے پاکستان نے اقوام متحدہ کو ایک ڈوزیئر دیا ہے جس میں‌ بھارت کے پراپیگندہ اور منفی سرگرمیوں کا بتایا ہے. کہ بھارت انٹرنیٹ پر جعلی خبروں کے خلاف کام کرنے والی تنظیم ’’ای یو ڈس انفو لیب‘‘ نے بھارتی جھوٹ کی فیکٹری ’’انڈیا کرونیکل‘‘ اور ’’ای یو کرونیکل‘‘ کو بے نقاب کر دیا۔

تنظیم کے مطابق بھارت ویب سائٹ ’’انڈین کرونیکل‘‘ کے ذریعے جعلی خبریں پھیلا رہا ہے۔ انڈین کرونیکل اقوام متحدہ کی تنظیموں اور صحافیوں کے جعلی اکاؤنٹس سے جعلی خبریں پھیلاتی ہے۔

این جی او کے مطابق ’’انڈین کرونیکل‘‘ نے یورپی یونین کے لیے نئی ویب سائٹ بنائی ہے۔ یورپی قانون سازوں اور صحافیوں کے جعلی اکاؤنٹس بنا کر ان سے جعلی مضامین شیئر کرائے جاتے ہیں۔بھارتی نیوز ایجنسی ’’اے این آئی‘‘ ان جعلی خبروں کو بھارت میں پھیلاتی ہے۔ بھارت میں بزنس ورلڈ میگزین اور دیگر ادارے انہیں شائع کرتے ہیں۔ اس سے بھارت اور یورپی یونین میں پاکستان مخالف بیانیہ پھیلایا جاتا ہے۔

بھارتی ادارہ Srivastava اس کی پشت پناہی کر رہا ہے۔ یہ تنظیم پاکستان اور چین کے خلاف منفی مواد کی تشہیر میں ملوث ہے۔ جعلی خبروں کے ذریعے مقبوضہ کشمیر میں بھارت مخالف مہم کو غلط رنگ دیا جاتا ہے۔

ای یو ڈس انفو لیب کی تحقیق کے مطابق بھارت 15سال سے یورپی یونین اور اقوام متحدہ کو غلط مواد کے ذریعے گمراہ کر رہا ہے۔ اس مقصد کے لیے ساڑھے سات سو جعلی میڈیا گروپ اور دس سے زائد جعلی این جی اوز سے پراپیگنڈہ کیا جاتا ہے۔
یاد رہے کہ گزشتہ سال بھی بھارت کی جانب سے پاکستان کیخلاف پراپیگنڈے کے ایک اور منظم منصوبے کی تفصیلات سامنے آئی تھیں جس کے مطابق دنیا بھر میں بھارت کے زیر انتظام 265 جعلی نیوز سائٹس پاکستان کی منفی تصویر پیش کرنے اور پاکستان کے حوالے سے رائے عامہ ، حکومتی اہلکاروں، عوامی نمائندوں اور تھنک ٹینکس پر اثر انداز ہونے کی کوشش کر رہی تھیں۔

یورپی تھنک ٹینک یورپی یونین ڈس انفولیب نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ خود کو یورپی پارلیمنٹ کا نمائندہ میگزین کہنے والی ویب سائٹ ای پی ٹوڈے ڈاٹ کام نے پاکستان میں اقلیتیوں کے متعلق بے شمار خبریں شائع کیں، یہ ویب سائٹ بھارتی سٹیک ہولڈرز کے زیر انتظام ہے۔

ویب سائٹ سری واستو نامی ایک گروپ سے منسلک تھنک ٹینکس، این جی اوز اور کمپنیوں کے ایک نیٹ ورک کا حصہ ہے جس میں معروف ناموں والی ویب سائٹ جیسا کاہ نئی دہلی ٹائمز اور تھنک ٹینک جیسا کہ انٹرنیشنل انسٹیٹیوٹ فار نان الائنڈ سٹیڈیز (ٓئی آئی این ایس) شامل ہیں۔

اس نیٹ ورک کے مختلف این جی اوز مثلاً یورپین آرگنائزیشن فار پاکستانی منارٹیز اور پاکستانی ویمن ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کیساتھ مضبوط تعلقات ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ان ویب سائٹ کے نام حقیقی اور معروف ویب سائٹس اور نشریاتی اداروں کے ناموں سے ملتے جلتے رکھے گئے ہیں، یہ مختلف معروف اور مصدقہ ایجنسیوں کی خبروں کا مواد شائع کرتی ہیں بھارت سے متعلقہ مظاہروں اور واقعات کی کنٹرولڈ کوریج کرتی ہیں۔

پاکستان مخالف مواد شائع کرتی ہیں اور بڑی مہارت کے ساتھ پاکستان کے خلاف عالمی اداروں، نمائندوں، حکومتی عہدیداروں اور عوام کی رائے پر اثر انداز ہونے کی کوشش کرتی ہیں

Leave a reply