عمران خان اسرائیل کو تسلیم کر لے توکیا ہو جائیگا؟ علامہ طاہر اشرفی نے مبشرلقمان کی تائید کر دی

عمران خان اسرائیل کو تسلیم کر لے توکیا ہو جائیگا؟ علامہ طاہر اشرفی نے مبشرلقمان کی تائید کر دی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے مشیر اور پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین علامہ طاہر اشرفی نے کہا ہے کہ اگر کرپشن معاف کر دی جائے تو سب تحریکیں ختم ہو جائیں گی

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ اگر آج عمران خان اسرائیل کو تسلیم کرنے کا فیصلہ کر لے اور کرپشن معاف کر دے تو تمام تحریکیں ختم ہو جائیں گی

علامہ طاہر اشرفی کا مزید کہنا تھا کہ فوج مخالف بیانیہ ہندوستان اسرائیل کا بیانیہ ہے

ایک اور ٹویٹ میں علامہ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور فوج دشمن بیانیہ کی دھمکیاں نہ دو، جو کرنا ہے کرو، قوم تم سے حساب لے کر رہے گی

علامہ طاہر اشرفی نے جو بات کی ہے یہی بات سینئر صحافی و اینکر پرسن مبشر لقمان نے بھی کر چکے ہیں، مبشر لقمان آفیشیل یوٹیوب چینل پر سینئر صحافی مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ایف اے ٹی ایف کو اسوقت تک ڈالا ہوا ہے جب تک اسرائیل کو تسلیم نہیں کرتے، جب پاکستان کہے گا اسرائیل کو تسلیم کرتے ہیں، تل ابیب میں سفارتخانہ کھولتے ہیں تو پھر ایف اے ٹی ایف صرف وائیٹ ہی نہیں بلکہ بہت اچھی ہو جائے گی، نوٹوں کی بارش ہونی ہے پھر،

مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ مبشر لقمان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں اصولوں کی وجہ سے مار پڑ رہی ہے، یہ ایف اے ٹی ایف پاکستان کے اوپر کئی وجوہات سے الزام ہیں، اور وہ وجوہات آپ کو پتہ ہونی چاہئے، یہ ڈرامہ کہ ایف اے ٹی ایف منی لانڈرنگ یا ٹیررفنانسگ پر ہو رہی ہے، دو ماہ پہلے امریکی جریدے میں رپورٹ آئی کہ انڈیا ٹیرر فنانسنگ کر رہا ہے تو کیا انڈیا کا نام ایف اے ٹی ایف میں آیا،نہیں آیا، ٹیررفنانسگ،منی لانڈرنگ کی مثال دے دی، اب اسرائیل کو مان لیں معیشت ٹھیک ہو جائے گی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.