سائفر انکوائری اور مقدمات کی تفصیلات فراہمی کیس،نوٹس جاری

0
56
bushra imran

اسلام آباد ہائیکورٹ: توشہ خانہ ، سائفر انکوائری اور مقدمات کی تفصیلات فراہمی کے پانچ کیسز پر سماعت ہوئی،

چیئرمین پی ٹی آئی کی پانچ درخواستوں پر عدالت نے نوٹس جاری کر دئیے ،توشہ خانہ کیس میں دستاویزات طلب نا کرنے کے خلاف دو درخواستوں پر نوٹس جاری کئے گئے،جج سے منسوب فیس بک پوسٹوں کی تحقیقات اور کیس ٹرانسفر کی درخواست پر بھی نوٹس جاری کئے گئے، چیئرمین پی ٹی آئی کی توشہ خانہ درخواستوں پر الیکشن کمیشن و دیگر کو نوٹس جاری کئے گئے، سائفر معاملے میں ایف آئی اے طلبی کے خلاف چیئرمین پی ٹی آئی کی درخواست پر بھی نوٹس جاری کر دیئے گئے، سائفر انکوائری کیس میں ایف آئی اے کو نوٹس جاری ، جواب طلب کر لیا گیا، مقدمات کی تفصیلات فراہمی کی درخواست پر بھی عدالت نے ایف آئی اے اور پولیس کو نوٹس جاری کر دئیے ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عامر فاروق نے پانچوں مقدمات میں نوٹس جاری کئے

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے وکیل سردار لطیف کھوسہ عدالت کے سامنے پیش ہوئے ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیا کہ آپ اس کیس میں وکیل ہیں؟ جس پر سردار لطیف کھوسہ ایڈووکیٹ نے کہا کہ جس کیس میں سائفر کی بات ہو رہی ہے، یہ بڑا افسوس ناک ہے کہ وزیر اعظم ہاؤس بھی محفوظ نہیں ،میں سابق وزیراعظم ہوں کوئی پتہ نہیں مجھے کیوں بلایا ہے یہ بادشاہت ہے، ہمارے دبنگ وزیر داخلہ کہتے ہیں انکوائری کے وقت گرفتار کر لیا جائے گا

امریکہ میں ڈونلڈ ٹرمپ کی بھی تو ریکارڈنگ سامنے آئی تھی،چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ
اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ امریکہ میں ڈونلڈ ٹرمپ کی بھی تو ریکارڈنگ سامنے آئی تھی، لطیف کھوسہ ایڈووکیٹ نے کہا کہ سائفرکو نیشنل سیکیورٹی کونسل نے ڈسکس کیا پھر امریکا سے احتجاج بھی ہوا ،امریکا کو پیغام دیا گیا تھا کہ ریاست پاکستان کے لیے یہ قابلِ قبول نہیں ہے ، جب وزیر اعظم کو عہدے سے ہٹایا گیا تو پھر نئی حکومت تشکیل پائی وزیر اعظم شہباز کی زیر صدارت دوبارہ قومی سلامتی کمیٹی کی میٹنگ ہوئی جس میں سائفر کو دوبارہ کنفرم کیا گیا ،سائفر کنفرم ہوا مداخلت کنفرم ہوئی پھر چیئرمین پی ٹی آئی کی حکومت نے ردعمل دیا، ایک بار پھر امریکا کو بھرپور پیغام دیا گیا، کیا اب کابینہ ایف آئی اے کو ہدایات دے سکتی ہے،کابینہ کی ڈائریکشن پر ایف آئی اے نے انکوائری شروع کی پارلیمانی کمیٹی بلا لیں وہاں اس معاملے کو ڈسکس کر لیں ، صرف یہ وزیراعظم نہیں بلکہ کسی بھی وزیراعظم کا فون ٹیپ ہونا جرم ہے 30 نومبر 2022 کے ایف آئی اے کے نوٹس کے خلاف لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا، لاہور ہائیکورٹ کے آرڈر کی کاپی بھی میں نے ساتھ منسلک کی ہے ،ہمیں کہا گیا اسلام آباد کا نوٹس ہے تو اسلام آباد ہائیکورٹ جائیں یہ چیئرمین پی ٹی آئی کی بات نہیں بلکہ وزیراعظم آفس کی بات کی ہے

سائفر معاملے پر ایف آئی اے نوٹس کے خلاف چیئرمین پی ٹی آئی کی درخواست پر دلائل مکمل ہونے کے بعد عدالت نے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا

بنی گالہ کے کتوں سے کھیلنے والی "فرح”رات کے اندھیرے میں برقع پہن کر ہوئی فرار

ہمیں چائے کے ساتھ کبھی بسکٹ بھی نہ کھلائے اورفرح گجر کو جو دل چاہا

فرح خان کتنی جائیدادوں کی مالک ہیں؟ تہلکہ خیز تفصیلات سامنے آ گئیں

بنی گالہ میں کتے سے کھیلنے والی فرح کا اصل نام کیا؟ بھاگنے کی تصویر بھی وائرل

بشریٰ بی بی کی قریبی دوست فرح نے خاموشی توڑ دی

فرح خان کیسے کرپشن کر سکتی ؟ عمران خان بھی بول پڑے

سینیٹ اجلاس میں "فرح گوگی” کے تذکرے،ہائے میری انگوٹھی کے نعرے

Leave a reply