بھارت نے سیلابی پانی چھوڑنے کے بعدپاکستان کو پانی کا ڈیٹا فراہم کر دیا. سیلاب کا خطرہ بڑھ گیا

لاہور:بھارت کی یاری بھی مکاری سے کم نہیں‌، بھارت نے پاکستانی دریاوں میں سیلابی پانی چھوڑنے کے بعد جزوی معلومات فراہم کی ہیں. یہ ڈیٹا کس حد تک درست ہےاس کا بعد میں پتہ چلے گا. تاہم پاکستان میں ممکنہ سیلابی صورتحال کے دوران پاکستان اور بھارت کے درمیان پہلا رابطہ ہوا ہے۔ پاکستان اور بھارت کےانڈس واٹر کمشنرز کے درمیان پانی کا ڈیٹا شیئر کرنے سے متعلق گفتگو ہوئی جس کے بعد بھارت نے پاکستانی انڈس واٹر کمشنر کو پانی کا ڈیٹا فراہم کردیا۔

پاکستانی دریاوں میں سیلابی پانی چھوڑنے کے حوالےسے ذرائع نے بتایا کہ گزشتہ شام 7 بجے ملنے والے ڈیٹا کے مطابق بھارت نے دریائے ستلج پر ابھی تک 24 ہزار کیوسک پانی چھوڑا ہے۔ بھارت کے ہریکے بیراج اور فیروزپور بیراج پر پانی کا بہاؤ ڈیڑھ لاکھ کیوسک ہے۔یاد رہے کہ بھارت، پاکستانی دریاؤں میں پانی چھوڑنے سے قبل سندھ طاس معاہدے کے تحت آگاہ کرنے کا پابند ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.