fbpx

اقتصادی نقل و حمل میں تیزی لانے کیلئے شاہراہیں اہم ہوتی ہیں، صادق سنجرانی

چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے کہا ہے کہ شاہراہیں کسی بھی قوم اور معاشرے کی معاشی و اقتصادی ترقی میں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں، اس ویژن کے مطابق صوبہ بلوچستان میں شاہراہوں کے نیٹ ورک کو مزید پھیلایا جا رہا ہے تا کہ صوبے میں ترقیاتی عمل میں مزید تیزی لا کر عوام کا معیار زندگی تبدیل کیا جا سکے۔

چیئرمین سینیٹ کو نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے حکام نے بلوچستان میں جاری منصوبوں پر بریفنگ دی ہے، بتایا کہ 103 کلومیٹر طویل نوکنڈی، ماشخیل روڈ کا افتتاح جلد کیا جائے گا، اسکا افتتاح 10 اگست کو چیئرمین سینیٹ خود کریں گے، حکام نے بریفنگ میں بتایا کہ زیارت، بالا نوش تا دالبندین شاہراہ پر کام اکتوبر کے مہینے میں شروع کیا جائے گا.

اس موقع پر چیئرمین سینیٹ نے ہدایات دیں کہ شاہراہوں سے جاری منصوبوں کو جلد پائیہ تکمیل تک پہنچایا جائے، نوکنڈی تا ماشخیل روڈ پر آبادی اور کجھور کے باغات کو کسی قسم نقصان نہ پہنچے اور آبادی اور باغات کو بچانے کیلئے روڈ کے الائنمنٹ کا ازسرِ نو جائزہ لیا جائے اور شاہراہوں کے دونوں اطراف درخت لگائے جائیں، شاہراہوں کا نیٹ ورک بڑھانے کے ساتھ ساتھ ماحولیاتی آلودگی کے اثرات کو کم کرنے کیلئے شجر کاری کے منصوبے شروع کئے جائیں، اُمید کا اظہار کیا کہ صوبے کی معاشی و اقتصادی ترقی میں شاہراہیں کلیدی کردار ادا کریں گی، اس بات پر زور دیا کہ اقتصادی نقل و حمل میں تیزی لانے کیلئے نئی شاہراہیں بنانا اور پرانی شاہراہوں کی بحالی انتہائی اہم ہے اور یہ کہ معیاری شاہراہوں کی تعمیر ملک کی مجموعی معاشی سرگرمیوں پر مثبت اثرات مرتب کرے گی. انہوں نے کہا کہ این ایچ اے، ان کے انجینئرز اور ماہرین کی کاوشیں لائق تحسین ہیں۔

چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ بلوچستان ایک اہم صوبہ ہے شاہراہوں کا نیٹ ورک صوبے کی تقدیر بدل دے گا، حکام نے بتایا کہ بلوچستان صوبے میں نیشنل ہائی وے کا نیٹ ورک 3835 کلومیٹر پر مشتمل ہے اور بہتر مانیٹرنگ اور دیکھ بھال کیلئے مختلف زون تشکیل دیئے گئے ہیں علاوہ ازیں چیئرمین سینیٹ کو بسیمہ، خضدار، یکمچ -خاران، کچلاک، ژوب اور کوئٹہ مغربی بائی پاس سمیت دیگر اہم منصوبوں پر بھی بریفنگ دی گئی ہے، بریفنگ ممبر این ایچ اے بلوچستان شاہد اللہ اور جی ایم تعمیرات نور الحسن مندوخیل نے دی ہے.