ایران پر امریکا کا دباؤ کیسے کارگر رہا، ٹرمپ نے بتایا

ایران پر امریکا کا دباؤ کیسے کارگر رہا،ٹرمپ نے بتایا

باغی ٹی وی امریکی انتظامیہ کے ایک سینیر عہدیدار نے ہفتے کے روز کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی قیادت میں ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ کی پالیسی کار آمد ثابت ہوئی ہے۔

ایک امریکی عہدیدار نے بتایا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ ایران کے ساتھ اس کے متنازع ایٹمی پروگرام ، زیر حراست افراد کے معاملے پر بات چیت کرنے ، پڑوسی ممالک کے امور میں ایرانی مداخلت اور میزائل پروگرام پر بغیر کسی پیشگی شرط کے ایرانی قیادت کے ساتھ مذاکرات کی پیش کش کی ہے۔امریکی عہدیدار کی طرف سے یہ بیان اس وقت سامنے آیا جب ایران میں قید ایک امریکی زیو وانگ’ کی رہائی کی اطلاعات ہیں۔

ایران اور امریکا نے ہفتے کے روز قیدیوں کا تبادلہ کیا گیا۔ پرنسٹن یونیورسٹی ایک طالب علم کی رہائی کے بدلے میں امریکا میں زیرحراست ایک ایرانی سائنسدان کو رہا کیا گیا ہے۔امریکی عہدیدار نے کہا کہ امریکا نے ایرانی قید مسعود سلیمانی کے خلاف الزامات ساقط کردیے ہیں۔

شدید تناؤ کے باوجود ، ایران اور امریکا کے درمیان قیدیوں کی رہائی کا تبادلہ

امریکی عہدیدار کا خیال تھا کہ وانگ کو غیر منصفانہ طور پر حراست میں لیا گیا۔ ایران میں اس پر جاسوسی کا الزام لگایا گیا لیکن وہ جاسوس نہیں تھا اور نہ اس اس طرح کی کسی دوسری گرمی میں شامل رہا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.