کسانوں کا ایک بار پھر اسلام آباد کا رخ

0
55

کسانوں نے ایک بار پھر مطالبات کے حق میں اسلام آباد کا رخ کرلیا، کسان آج اسلام آباد پہنچیں گے۔

کسانوں کے احتجاج کے پیش نظر اسلام آباد کے مختلف مقامات سیل کر دئیے گئے ہیں، روات ٹی چوک کو کنٹینرز لگا کر بند کردیا گیا۔ ایکسپریس وے اور جی ٹی روڈ پر رکاوٹوں کے باعث شدید ٹریفک جام ہے۔ راستوں کی بندش سے سرکاری ملازمین کو دفاتر اور طلبہ کو تعلیمی اداروں تک پہنچنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

تاہم اسلام آباد کیپیٹل پولیس کے مطابق کے رش اور شہریوں کی آسانی کی خاطر ٹی چوک روات کے رستے کھول دئیے گئے۔ ریڈ زون اور ڈی چوک کے رستے بھی محدود پیمانے پر کھولے گئے ہیں، شہریوں کو آمد و رفت میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے۔


احتجاجی مظاہرے میں آنے والے لوگوں کے ساتھ اسلام آباد میں داخل ہونے سے پہلے مذاکرات ہوں گے، ڈی آئی جی آپریشنز، ڈی سی اسلام آباد اور انتظامیہ موقع پر موجود ہوں گے۔ شہریوں کی سہولت کی خاطر ٹریفک اور سکیورٹی کے تمام تر انتظامات سے آگاہ رکھا جائے گا۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں پنجاب کسان اتحاد نے واضح کیا تھا کہ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ سے ہونے والے مذاکرات اگر ناکام ہوئے تو ڈی چوک کی جانب مارچ کریں گے۔ پنجاب کسان اتحاد کے سینئر نائب صدر شوکت خان نے یہ بات ذرائع ابلاغ سے بات چیت کرتے ہوئے کہی تھی ایک سوال کے جواب میں شوکت خان نے کہا تھا کہ ابھی تک ہونے والی بات چیت میں حکومت نے پنجاب کسان اتحاد کی جانب سے پیش کردہ مطالبات اور عائد کردہ شرائط پہ آمادگی ظاہر نہیں کی ہے۔
پنجاب کسان اتحاد کے سینئر نائب صدر شوکت خان نے کہا تھا کہ ن لیگی رہنما اور وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کے ساتھ اس وقت پنجاب کسان اتحاد کے نمائندے مذاکرات میں مصروف ہیں۔ اور وعدے کیے جاتے ہیں، عملدرآمد نہیں ہوتا، بے بس کسان احتجاج کریں گے. واضح رہے کہ پنجاب کسان اتحاد کی جانب سے اپنے مطالبات کے حق میں ایف نائن پارک میں احتجاجی دھرنا دیا گیا تھا اور موجود لوگوں نے اپنے مطالبات کے حق میں نعرے بازی بھی کی تھی.

Leave a reply