"میرا جسم میری مرضی ” کے نعرے سے بڑھ کرفحاشی اورکیا ہوسکتی ہے، سینیٹرمشاہداللہ خان

0
37

اسلام آباد :”میرا جسم میری مرضی ” کےنعرے سے بڑھ کرفحاشی اورکیا ہوسکتی ہے، اطلاعات کےمطابق ملک بھرمیں ایک نئے نعرے اورپھراس پرپیدا ہونے والے مسائل پرپاکستان مسلم لیگ ن کے سینیٹرمشاہداللہ خان نے بھی اپنے جزبہ ایمانی کا بھرپورمظاہرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ نعرہ سوائے فحاشی کے اورکچھ نہیں ، یہ غلط نعرہ ہے اورہم اس کوغلط کہتے رہیں گے

ذرائع کےمطابق ایک موقع پر مسلم لیگ ن کے سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ مرد اور عورت کی بحث فضول ہے، کسی مارچ کے خلاف نہیں، مرد کےخلاف بات کرنے سے قبل عورت اپنا حق حاصل کرنے کے لیے اپنے باپ بھائی کے خلاف مہذب انداز میں بات کرے۔

سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ تحقیقات کی جائیں کہ میرا جسم میری مرضی کون کرارہا ہے، یہ این جی اوز کا نیا طریقہ ہے۔ میرا جسم میری مرضی کا مطلب فحاشی ہے، آپ کریں، ہم اپ کو روکیں گے نہیں، لیکن غلط کو غلط کہیں گے۔

Leave a reply