موٹاپا اور اس سے نجات کے طریقے تحریر: زارا سیٌد

0
69

ھمارے جسم میں چربی زیادہ ہو جانے سے موٹاپا ھوتا ھے جو ایک پیچیدہ بیماری ہے۔ موٹاپا ایک ایسا مسئلہ ہے جو نظر انداز کئے جانے سے کئی اور بیماریوں کا باعث بنتا ہے۔ جیسے کہ دل کی بیماریاں، شوگر، بلڈ پریشر میں اضافہ اور کئی قسم کے کینسر وغیرہ۔ یہی وجہ ہے کہ موٹاپا کم کرنا بہت ضروری ھے۔ 

کچھ ایسے طریقے ھیں جن سے موٹاپا کم کیا جاسکتا ھے مثلاً۔۔۔

 موٹاپے کی وجوھات؟
روز مرہ کی سرگرمی اور ورزش میں جلنے سے زیادہ کیلوری کھانا موٹاپے کا باعث بن سکتا ہے۔ وقت گزرنے کے ساتھ ، یہ اضافی کیلوری وزن میں اضافے کا سبب بنتی ہیں۔لیکن یہ ہمیشہ صرف زیادہ کیلوری کے کھانے سے نہیں ہوتا ہے ، یا پھر صرف کم حرکت طرز زندگی سے نہیں ہوتا ہے۔ اگرچہ یہ واقعتا موٹاپے کی وجوہات ہیں ، کچھ وجوہات ایسی بھی ھوتی ہیں جن پر آپ قابو نہیں پا سکتے ہیں۔

موٹاپا سے نجات کا طریقہ:
پروٹین کا استعمال:
تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ ناشتے میں اناج سے بنی اشیا کی جگہ انڈے یا کوئی بھی پروٹین اور کیلشیم سے بھرپور غذا کھانا زیادہ فائدہ مند ھے یہ جسم میں اگلے کئی گھنٹے تک غذائی حرارے لینے کی ضرورت کو کم کردیتا ہے جسکی وجہ سے جسم میں پہلے سے موجود چربی استعمال میں لا کر موٹاپا کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔

بغیر چھنا آٹا:
زیادہ باریک آٹا استعمال نہ کریں۔ اس کی بجائے بغیر چھنا ہوا آٹا وزن کم کرنے کے لیے استعمال کریں۔

چھوٹے برتن کا استعمال:
چھوٹی پلیٹ کا استعمال کھانا کم کھانے کا ایک طریقہ ہے۔ اور جب کھانا تھوڑا کھایا جائے تو جسم موجود چربی استعمال ہو کر موٹاپا کم کرنے میں مدد کرتی ھے۔

چینی کا استعمال ترک کرنا:

کسی بھی کھانے پینے کی چیز میں اضافی مٹھاس کے لیے چینی کا استعمال ترک کر دینا چاہیے۔

پانی کا استعمال:

وزن کم کرنے کے لیے پانی کھانے سے آدھ گھنٹہ پہلے پینا موٹاپا کم کرنے کے طریقوں میں سے مؤثّر ترین طریقہ ہے اور یہ بات ایک تحقیق سے ثابت ھوئی ہے کہ کھانے سے پہلے پانی پینے والے افراد ایسا نہ کرنے والوں کے مقابلے میں اپنا وزن 44 فیصد تک زیادہ کم کر سکتے ہیں

کافی پینا:

کافی کے بہت سے فوائد ھیں ایک اس کا ایک فائدہ یہ بھی ھے کہ موٹاپا کم کرتی ھے بشرطیکہ اسے بہت کم مٹھاس کے ساتھ یا اس کے بغیر لیا جائے۔

سبز چائے:

اس کے فوائد بھی کافی کی طرح اس میں چینی شامل نہ کی جاۓ بلکہ شہد اور لیموں کا استعمال کیا جائے۔

کبھی فاقہ کریں:

کچھ دنوں کے بعد دو دن روزہ رکھنا یا کسی دن تین کی بجائے صرف دو بار کھانا بھی موٹاپا دور کرنے طریقوں میں سے ایک خاصا مفید طریقہ ہے۔ 

خوراک کے اجزأ پر نظر رکھیں:

اپنے کھانے میں شامل اجزأ پر نظر رکھنا موٹاپا کم کرنے کے طریقے کے طور پر اپنانا بہت مفید ثابت ہوتا ہے۔ اس کی وجہ سے آپ یہ معلوم کر پاتے ہیں کہ آپ کے کھانے میں شامل کون سی اشیاء جسم میں چربی کے اضافے کا باعث ہوتی ہیں اور کون سی کم غزائی حراروں یا کیلوریز پر مشتمل ہونے کی وجہ سے جسم میں پہلے سے موجود چربی کے استعمال سے موٹاپا کم کرنے کا کام کر سکتی ہیں۔ اس مقصد کے لیے اپنے ہر کھانے کو کسی ڈائری میں لکھ لیں۔

فائبر والی خوراک کھانا:

زیادہ ریشوں والی خوراک کا لینا جہاں ہاضمے کے لیے مفید ہے یہ کم غذائی حراروں پر مشتمل ہوتی ہے جس وجہ سے جسم اپنی توانائی کو پورا کرنے کے لیے اپنی چربی کو استعمال کرتا ہے اور موٹاپا کم ہونے لگتا ھے

پھل زیادہ کھانا:

پھل اور سبزیاں صحت بخش ہونے کے علاوہ ایسے خواص کے بھی حامل ہیں جن سے موٹاپا کم ہوتا

ڈائٹنگ نہ کریں

بالکل کھانا چھوڑ دینا یا کھانے کے لیے ضروری اجزاء میں سے کوئی کم یا زیادہ لینا خوراک کو صحت بخش نہیں رہنے دیتا۔ اس لیے موٹاپا کم کرنے کے طریقے کے طور پر عمل میں لانا صحت کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے۔
@Oye_Sunoo

Leave a reply