عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں مزید گرگئیں،پاکستان میں کتنی کم ہوں گی اہم خبرآگئی

ریاض :عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں مزید گرگئیں ،اطلاعات کے مطابق عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں بدھ کے روز مزید کمی دیکھی گئی ہے اور یہ 2002 کے بعد کی کم ترین سطح پرآگئی ہے۔
فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق تیل کی قیمتوں میں گراوٹ تیل پیدا کرنے والے ممالک کی جانب سے پیداوار میں حالیہ کمی کے باوجود جاری ہے۔

ذرائع کےمطابق فی بیرل 20 ڈالرقیمت کم ہوگئی ہے ، جس کے بعد عالمی مارکیٹ میں قیمتوں کے کم ہونے سے عالمی معیشت پربہت زیادہ گہرے اثرات مرتب ہوں گے

ادھر عالمی مارکیٹ سے متعلق تحقیق کرنے والوں کا کہنا ہےکہ یہ پچاس سال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ اس قدر کم قیمتیں ہوئی ہیں ،دوسری طرف معاشی ماہرین کا کہنا ہےکہ 20 کی دہائی میں تیل کی قیمتوں کے اثرات دنیا پربہت گہرے ہوں گے

ماہرین کے مطابق یہ تاریخ میں خام تیل کی پیداوار میں اپنی نوعیت کی سب سے بڑی کمی ہے۔ اوپیک پلس اوپیک کے رکن مالک اور تیل پیدا کرنے والے غیر رکن ممالک پر مشتمل ہے جن میں روس سرفہرست ہے۔

امریکی صدر ٹرمپ نے میکسیکو کی شرائط آسان بنانے کے لیے مداخلت کی تھی جس کے تحت میکسیکو کی تیل پیداوار اوپیک پلس ممالک کی نسبت کم ہو جائے گی۔صدر ٹرمپ نے ٹوئٹر پر بیان میں اس ‘عظیم ڈیل’ پر سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور روس کے صدر پوٹین کا شکریہ بھی ادا کیا تھا۔

کویتی وزیر پیٹرولیم خالد الفاضل نے ٹویٹ میں کہا تھا کہ ’تیل کی پیداوار میں کمی کا معاہدہ یکم مئی 2020 سے نافذ ہوگا- میکسیکو کے ساتھ درمیانہ حل طے پایا۔’متحدہ عرب امارات کے وزیر توانائی نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ‘یو اے ای اپنی تیل کی پیداوار 4.1 ملین بیرل یومیہ کی سطح سے کم کرنے کا پابند ہے۔’

روسی خبر رساں ادارے کے مطابق روسی وزیر توانائی نے امید ظاہر کی کہ تیل کی مارکیٹ کی صورت حال سال رواں کے آخر تک بہتر ہو جائے گی۔
امریکہ نے اس عزم کا اظہار کیا تھا کہ ‘وہ یومیہ 2 سے تین ملین بیرل تیل کی پیداوار کم کر دے گا۔’

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث تیل کی طلب کم ہوئی ہے اور عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں مسلسل کمی ہو رہی ہے۔پاکستان میں بھی تیل کی قیمتیں‌بہت کم ہوئی ہیں تاہم ذرائع کےمطابق عمران خان چند دن پہلے کابینہ سے مشاورت کرچکے ہیں کہ عوام کو ریلیف دینے کے لیے تیل کی قیمتوں میں مزید کمی ہونی چاہیے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.