fbpx

سخت معاشی حالات میں بھی وزیراعظم نے عوام کو ریلیف دیا. وزیر خزانہ

اسلام آباد میں ٹرن آراؤنڈ پاکستان کانفرنس میں بات کرتے ہوئے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز نے سخت معاشی حالات میں بھی غریب پاکستانی عوام کو ریلیف دینے کی بھرپور کوشش کی ہے.

انہوں نے مزید کہا ہمیں ٹیکس اکٹھا کرنے کے نظام کو درست کرنا ہے اور وزیر خزانہ نے مزید کہا کہ بہت جلد آئی ایم ایف سے دو ارب ڈالرز مل جائیں گے. پاکستان کوآئی ایم ایف کی جانب سے ساتویں اور آٹھویں جائزے کا میمورنڈم موصول ہوگیا ہے۔ جولائی کےشروع میں قرض کی قسط ملنے کا امکان ہے۔

وزیر خزانہ کے مطابق: آئی ایم ایف سے قرض معاہدے میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔ آئی ایم ایف نے ساتویں اور آٹھویں جائزے کا میمورنڈم پاکستان کو دے دیا۔


واضح رہے کہ پاکستان آئی ایم ایف کے ساتھ پروگرام 8 ارب ڈالر تک بڑھانے اور آئندہ سال تک توسیع کیلئے کوشش کررہا ہے.

گزشتہ شب وزیر خزانہ نے ہم نیوز کے پروگرام ’’ہم مہربخاری کے ساتھ‘‘ میں بتایا کرتے ہوئے بتایا کہ پیٹرولیم مصنوعات پر لیوی لگائی جائے گی۔ اور اوگرا کی سمری آنے کے بعد وزیرعظم حتمی منظوری دیں گے۔ لیکن میں سیلز ٹیکس لگانے کے حق میں نہیں ہوں۔

اسحاق ڈار کو وزیر خزانہ بنائے جانے کی خبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ ان کو عہدے پر رکھنا یا نہ رکھنا وزیراعظم کی صوابدید ہے ۔ وہ اگر کام سے مطمئن نہیں ہیں تو وزیر خزانہ کو تبدیل کر سکتے ہیں۔

وزیر خزانہ کی تبدیلی بارے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سیاست میں یہ ہوتا رہتا ہے۔ وزیراعظم تو ان کے ساتھ اگلے کئی دنوں کے پلان بنا رہے ہیں لیکن مستقبل کا کسی کو پتہ نہیں ہوتا جیسے اسد عمر کے ساتھ ہوا ۔

انہوں نے واضح کیا کہ اسحاق ڈار حکومت کی معاشی ٹیم کا حصہ ہیں۔ اسٹیٹ بینک کے انٹرویوز میں بھی وہ پینل میں شامل تھے ۔