fbpx

بیٹوں کو یوکرین کیخلاف جنگ میں بھیجنے کا انعام،پیوٹن نے چیچن سربراہ کوروسی فوج کے اعلی فوجی عہدے پرترقی دیدی

روسی صدرپیوٹن کے اتحادی اور روس کی نیم خودمختار مسلم اکثریتی آبادی والی ریاست چیچنیا کے سربراہ رمضان قادریوف نے 5 ستمبر کو اعلان کیا کہ انہیں روسی فوج کے اعلی فوجی عہدے پرترقی دے دی گئی ہے۔

باغی ٹی وی : چیچن رہنما قادریوف نے کہا روسی صدر پیوٹن نے انہیں اپنے فیصلےت سے ذاتی طور پر آگاہ کیا ہے انہوں نے ٹیلی گرام پر کہا روسی صدر نے مجھے کرنل جرنل کے عہدے پر ترقی دی ہے۔ یہ میرے لیے ایک پروموشن ہے،رمضان قادریوف نےکہا یہ میرے لئے بہت بڑا عزاز ہے-

چیچن سربراہ کا اپنے 3 کم عمر بیٹوں کو یوکرین کے محاذ پر بھیجنے کا اعلان

یاد رہے کرنل جرنل کا عہدہ روسی فوجی عہدوں کی کی سیریزمیں تیسرے رینک پر آتا ہے یہ پیش رفت اس وقت سامنےآئی ہے جب روسی فوج کو یوکرین میں سلسلہ وار ناکامیوں کا سامنا کرنا پڑا اور قادروف نے اپنے 3 بیٹوں کو لڑنے کیلئے محاذ جنگ پر بھیجنے کا اعلان کیا تھا 46 سالہ چیچن قادروف رہنما یوکرین پر روسی حملے کے سب بے بڑے حامی ہیں۔

چیچن رہنما نے مزید کہا کہ وہ کریملن کی اصطلاح کا استعمال کرتے ہوئے خصوصی فوجی آپریشن کو فوری ختم کرنے کے لیے سب کچھ کریں گے۔

قادریوف نے روس کو یوکرین میں انتہائی سخت گیرحربے استعمال کرنے کا کہا تھااس ہفتے لیمان قصبہ سے روسی فوج کی پسپائی پر انہوں نے کہا تھا کہ روس یوکرین پر تکنیکی جوہری ہتھیار استعمال کر ڈالے۔ اس کے بعد انہوں نے اپنے 14، 15 اور 16 سال کے تین بیٹوں کو لڑنے کیلئے بھیجنے کا اعلان کردیا ۔

دوسری جانب روسی صدر ولادیمیرپیوٹن نے توقع ظاہر کی ہے کہ کریملن میں ضم شدہ یوکرین کے علاقوں میں صورت حال ’’مستحکم‘‘ ہوجائے گی جبکہ ماسکو کو حال ہی میں یوکرین میں پے درپے فوجی ناکامیوں کا سامنا کرنا پڑا ہے اور یوکرینی فوج نے متعدد اہم قصبے روسی فوج کے قبضے سے واگزار کرالیے ہیں۔

پیوٹن اپنے کیے کا خیمازہ بھگتیں گے،جوبائیڈن کی روسی صدر کو وارننگ

روسی اساتذہ کے ساتھ بدھ کو ٹیلی ویژن پر ویڈیو کال کے دوران میں صدر پیوٹن نے کہا کہ ہم اس مفروضے کی بنیادپرکام کررہے ہیں کہ نئے علاقوں میں صورت حال مستحکم ہوجائے گی ہماری فوج کے زیرقبضہ علاقوں کے روس کے ساتھ الحاق کے لیے نام نہاد ریفرنڈم کے نتائج قائل کرنے سے کہیں زیادہ تھے۔

صدرپیوٹن نے کہا کہ دیانت داری کی بات یہ ہے کہ ریفرینڈم کے نتائج نے نہ صرف مجھے خوش کیا بلکہ مجھے حیران بھی کیا۔وہ کسی شک وشبہ سے بالاتر تھے۔

مغرب اور یوکرین نے روس نواز علاقوں میں ریفرنڈم کے عجلت میں انعقاد کی مذمت کی تھی اور کہا تھا کہ ماسکونے ایک دکھاوے کے طور پریوکرینی علاقوں میں جلد بازی میں ریفرینڈم کا انعقاد کیا تھا جبکہ اس دوران میں یوکرینی فوج کی اپنے علاقوں کوواگزار کرانے کے لیے پیش قدمی جاری تھی۔

صدرپیوٹن نے گذشتہ ہفتےکریملن میں ایک بڑی تقریب میں یوکرین کے چارعلاقوں کو روسی ریاست میں ضم کرنے کا اعلان کیا تھا اورکہا تھا کہ ان کے باشندے اب ’ہمیشہ کے لیے‘روسی ہو جائیں گے۔

روس کا یوکرین کے 4 خطوں کے ساتھ الحاق کا اعلان:یوکرین اورمغربی ممالک نے مسترد…

انھوں نے یہ بات ایسے وقت میں کہی تھی جب یوکرین میں مختلف محاذوں پر روسی فوج کونمایاں فوجی نقصانات کا سامنا کرنا پڑاتھا۔اس سے قبل گذشتہ بدھ کے روز ماسکو نے کیف سے کھوئی گئی زمین واپس لینے کا عہد کیا تھا۔