fbpx

قیام پاکستان میں علمائے کرام کا کردار . تحریر: سیدعمیرشیرازی

علماء انبیاء کے وارث ہیں، یہ بات صحیح احادیث سے ثابت ہے، سننِ ترمذی، سننِ ابن ماجہ، صحیح ابنِ حبان ودیگرکتبِ حدیث میں حضرت ابو درداء رضی اللہ عنہ کی ایک طویل حدیث کا ایک جملہ "و إن العلماء ورثة الأنبياء” ہے،”سنن الترمذي” کی روایت کے الفاظ یہ ہیں۔

لیکن ہماری بدقسمتی تودیکھیں اس حدیث کا انکارکررہے ہوتے ہیں اورعلماء کرام پربےجا تنقید بلکہ ذاتیات پرجا کرانکا مذاق اڑانے کا کوئی موقع ضائع نہیں ہونے دیتے بات ہورہی ہے پاکستان کے قیام میں علماء کا کردار جب سرسید احمد خان نے دوقومی نظریے "Two Nation Theory” کی بنیاد رکھی اورانہیں یہ محسوس ہوگیا تھا مسلمان اورہندو ایک ساتھ نہیں رہ سکتے دونوں کے مذہب ایک دوسرے سے بہت مختلف ہیں مسلمان اللّه کے ماننے والے اورہندو بتوں کے پجاری ہیں۔

جب قائد اعظم محمد علی جناح نے چودہ اگست 1947 کے دن کا آزادی کا اعلان کیا تو ہندوؤں نے مسلمانوں پرتشدد کی کارروائیاں شروع کردیں اوردیکھتے ہی دیکھتے برصغیر جسے subcontinent کہا جاتا تھا وہاں ہرطرف مسلمانوں پرظلم وستم ڈھایا گیا، پھرمسلمانوں نے پاکستان ہجرت شروع کی اس ہجرت کے دوران لاکھوں مسلمانوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا اورانہی جانوں میں علماء کرام کی ایک بڑی تعداد شامل تھی اورتاریخ کی کتابوں میں یہ بات درج ہے کہ اس وقت کے علماء حق (علماء دیوبند) کے بیس لاکھ علماء کرام نے بھی اپنی جانیں قربان کی اس ملک کی بقاء کیلئےعلماء کو زندہ قبروں میں ڈالا گیا زندہ جلایا ہرطرح کا ظلم کیا گیا تھا.

قائداعظم رح کی محنت کے ساتھ ساتھ علماء کی بھی لازوال قربانیاں تھی جس کے بعد یہ پاک دھرتی باب الاسلام ہمیں ملا علمائے کرام کی لازوال قربانیوں کو ہم بھول نہیں سکتے اورسب سے التجا بھی ہےعلماء پرتنقید کرنے سے پہلے یہ ضرورسوچیں علماء کون ہیں کل روز محشرمیں جب ہم اللّه کے ہاں پیش ہونگے تو انبیاءؑ کی صفوں میں چالیس صفیں علماء کی ہونگی یہ شان ہے علماء کی اورآج ہم کتنی آسانی سے کسی عالم دین کا دنیا والوں کے سامنے مذاق بنا دیتے ہیں کیا ہمیں مرنا نہیں ہے ؟؟ موت تو برحق ہے کل ہم کس منہ سے حضورﷺ کے سامنے پیش ہونگے یہ سوچیں ذرا اورخدارا آج سے اللّه کے حضورمعافی مانگیں بیشک اللّه رحمن و رحیم ہے۔

@SyedUmair95