fbpx

ریشم نے کتابوں کو تنہائی کا ساتھی قرار دیدیا

فلم ”جیوا” سے کیرئیر کی شروعات کرنے والی اداکارہ ریشم نے فلم انٍڈسٹری میں ہیروئین کا تصور بالکل تبدیل کرکے رکھ دیا تھا. ریشم کا شمار ان اداکارائوں میں ہوتا ہے جنہوں نے وقت کے ساتھ ساتھ خود کو بدلا اپنے بولنے چالنے پر توجہ دی اور سیکھا کہ دنیا کے ساتھ کیسے چلنا ہے. ریشم اکثر اپنے گھر پر کوکنگ کرتی نیاز تیار کرتی ہوئی نظر آرہی ہوتی ہیں. ھال ہی میں اداکارہ ریشم نے ایک انٹرویودیا ہے اس میں انہوں نے کہا کہ آج اچھے ڈرامے بن رہے ہیں ان میں گلیمر بھی کافی زیادہ ہے لیکن یہ بھی زہن میں رہنا چاہیے ہر کوئی گلیمر کو پسند نہیں کرتا. انہوں نے مزید کہا کہ ٹی وی ڈرامے معاشرے کی اصلاح

کا بہترین ذریعہ ہیں اور سکرپٹ بھی پھر اسی حساب سے لکھا جانا چاہیے. اداکارہ ریشم نے مزید کہا کہ میں نے ٹی وی اور ڈرامے دونوں میں کام کیا ہے اور میں نے جتنا بھی کام کیا ہے اس پر بہت مطمئن ہوں. اب بھی اگر اچھا کام ملے گا تو یقینا کروں گی. جو لوگ ریشم کو قریب سے جانتے ہیں انہیں پتہ ہے کہ ریشم کو ادب سے خاصا لگائو ہے وہ اکثر خوبصورت اشعار اور غزلیں بھی سنا رہی ہوتی ہیں. اداکارہ نے کہا کہ کتابیں تنہائی کا بہترین ساتھی ہیں کتابوں سے بہتر کوئی دوست نہیں‌ہو سکتا. کتابوں سے ہم بہت کچھ سیکھ سکتے ہیں وہ الگ بات ہے کہ اب کتابیں‌پڑھنے کا بہت زیادہ رجحان باقی نہیں رہ گیا.