شاہ محمود قریشی نے وزرا کی کارکردگی رپورٹ کے ساتھ ساتھ شہزاد ارباب کی اہلیت پر بھی سوال اٹھا دیئے

0
113

اسلام آباد :شاہ محمود قریشی نے وزرا کی کارکردگی رپورٹ کے ساتھ ساتھ شہزاد ارباب کی اہلیت پر بھی سوال اٹھا دیئے،اطلاعات کے مطبق وزارتوں کی کارکردگی جانچنے کے طریقہ کار پر شاہ محمود قریشی نے سوال اٹھا دیئے، وزیر خارجہ نے وزیراعظم کے معاون خصوصی شہزاد ارباب کو خط لکھ دیا۔

شاہ محمود قریشی نے وزارت خارجہ کو 11 واں درجہ دینے پر تشویش کا اظہار کیا ہے، شاہ محمود قریشی نے لکھا کہ اس دوران وزارت خارجہ نے اعلیٰ سطح کی سرگرمیاں بھی کیں اور وزارت کے امور پر کبھی کسی نے تشویش کا اظہار نہیں کیا۔

 

 

انہوں نے کہا کہ 30 فیصد کارکردگی جائزہ سے متعلق کوئی تحریری گائیڈلائن نہیں دی گئی، وزارت خارجہ کی اس درجہ بندی سے جائزہ کمیٹی کے طریقہ کار پر سوال اٹھتے ہیں۔
وزیراعظم کی جانب سے بہترین وزارتوں میں وزارت خارجہ کو شامل نہ کرنے پر وزیر خارجہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے خط لکھ دیا جس میں وزارتوں کی گریڈنگ کا طریقہ کار دریافت کیا گیا ہے۔

 

 

ذرائع کے مطابق وزارتوں کی کارکردگی جانچنے کے طریقہ کار پر وزیر پارلیمانی امور علی محمد خان کے بعد اب شاہ محمود قریشی نے بھی سوالات اٹھا دیئے۔ انہوں نے اس حوالے سے وزیراعظم کے معاون خصوصی شہزاد ارباب کو خط لکھا ہے جس میں وزارت خارجہ کو 11واں نمبر دینے پر شدید تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے خط میں کہا ہے کہ پرفارمنس ایگریمنٹ کی پہلی سہ ماہی میں وزارت خارجہ نے 26 میں سے 22 اہداف حاصل کیے، دوسری سہ ماہی میں 24 میں سے 18 اہداف پورے کیے، وزارت خارجہ نے یقینی بنایا کہ ریویو پیریڈ کے دوران کوئی معاملہ زیر التواء نہ رہے، اس دوران وزارت خارجہ نے اعلیٰ سطح کی سرگرمیاں بھی کیں۔

خط میں کہا گیا ہے کہ وزارت خارجہ کے کاموں پر کسی تشویش کا کوئی اظہار نہیں کیا گیا، 30 فیصد کارکردگی جائزہ سے متعلق کوئی تحریری گائیڈ لائنز نہیں دی گئیٕں، وزارت خارجہ گریڈنگ کے اس طریقہ کار پر سوالات اٹھاتی ہے واضح کیا جائے کہ وزارتوں کی گریڈنگ کس طریقہ کار کے تحت کی گئی۔

Leave a reply