شہزاد اکبر کا ای سی ایل پر نام ڈالنے پر جواب

0
56

سابق وزیراعظم عمران خان کے مشیر احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ قومی احتساب بیورو نے گھوڑے کے آگے گاڑی ڈال دی، ابھی تک کوئی کیس نہیں مگر نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا.
وفاقی کابینہ اجلاس، 10 نام ای سی ایل میں ڈالنے کی منظوری

اپنے بیان میں ان کا کہنا تھا کہ این سی اے سیٹلمنٹ نیب انکوائری پر نیب کو دو بار مراسلہ لکھا۔انہوں نے بتایا کہ میں نے نیب کو لکھا کہ میرا بیان ویڈیو لنک پر یا لندن ہائی کمیشن میں لے لیا جائے، لگتا ہے نیب آزادانہ انکوائری میں دلچسپی نہیں رکھتا اس لیے اپنے خطوط پبلک کیے۔

پنجاب اسمبلی میں نجی قرض پر سود کی پابندی کا بل متفقہ طورپر منظور

 

شہزاد اکبر کا کہنا تھا کہ تمام خطوط اور واٹس ایپ میسیجز موصول کیے گئے ہیں، نیب نے گھوڑے کے آگے گاڑی ڈال دی، ابھی تک کوئی کیس نہیں مگر نام ای سی ایل میں۔ سابق وزیراعظم کے مشیر احتساب نے سوال اٹھایا کہ یاد دلاؤں یہ این سی اے سے تصفیہ ہے تو کیا این سی اے عہدیداروں کے نام بھی ای سی ایل میں ڈالیں گے؟شہزاد اکبر کا کہنا تھا کہ نیب کے آئی بی میں تبدیل ہونے میں کوئی شک باقی نہیں رہے گا، منی لانڈررز انتقامی کارروائیوں میں مصروف ہیں۔

وفاقی کابینہ نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سابق مشیر داخلہ شہزاد اکبر سمیت 10 افراد کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل ) میں ڈالنے کی منظوری دیدی۔وزیراعظم شہباز شریف کی زیرِ صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم ہاؤس اسلام آباد میں منعقد ہوا ۔ وفاقی کابینہ نے سابق وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر سمیت دس افراد کے نام ای سی ایل میں ڈال دیے۔

وفاقی کابینہ نے 10افراد کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی منظوری دیدی اور 22لوگوں کے نام ای سی ایل سے نکالنے کی منظوری دیدی۔ کابینہ نے وزارتِ داخلہ کی سفارش پر 22 لوگوں کے نام ای سی ایل سے نکالنے جبکہ 3 لوگوں کوایک مرتبہ باہر جانے کی اجازت کی منظوری بھی دی۔

Leave a reply