مروہ قتل کیس:شوبز فنکاروں کا ملک میں مجرموں کو سرعام پھانسی دینے کے قانون کا مطالبہ

0
50

پاکستانی شوبز فنکاروں نے کراچی میں 5 سالہ ننھی بچی مروہ سے جنسی تشدد کے بعد اندوہناک قتل پر آواز اٹھاتے ہوئے وزیراعظم عمران خان سے ملک میں مجرموں کو سرعام پھانسی دینے کے قانون کے نفاذ کا مطالبہ کیا ہے۔

باغی ٹی وی : دو روز قبل ‏کراچی کے علاقے پرانی سبزی منڈی میں معصوم مروہ کو اغوا کیا گیا جس کو تشدد کا نشانہ بنا کر اور اس کے جسم کو جلا کرکراچی کے علاقے عیسیٰ نگری کے قریب خالی پلاٹ میں کچرے میں پھینک دیاگیا بعد ازاں پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بچی کے ساتھ زیادتی کی تصدیق بھی ہوگئی تھی۔

ننھی مروہ کے ساتھ اتنے بہیمانہ سلوک اور بے رحمی سے قتل کرنے کے واقعے نے جہاں عوام کو دُکھی کر دیا ہے وہیں شوبز فنکاروں نے بھی ننھی مروہ کے لیے آواز اٹھاتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعظم کو بچوں کے ساتھ زیادتی کرنے کے بعد انہیں قتل کرنے والے ملزمان کو سرعام پھانسی دینے کے قانون کا نفاذ کرنا چاہیئے تاکہ بچوں کے ساتھ بہیمانہ سلوک کرنے والے ملزمان عبرت کا نشان بن سکیں۔

اسلام کی خاطر شوبز کو خیر باد کہہ دینے والی رابی پیرزادہ نے کہا کہ ‏کتنے سالوں سے کہہ رہی ہوں جب تک عبرت نہیں بنائو گے یہ وحشی نہیں رکیں گے، اللہ کی قسم میں ایسے لوگوں کی کھال اتار کر چوک پر لٹکا دوں اور اس بچی کو ماں کو آگ دوں کہ جلائو زندہ اسے جیسے اس نے تمہاری بچی کو جلایا، عورت مارچ والوں اس پر مارچ بنتی ہے۔
https://twitter.com/yumnazaidiactor/status/1303056184451239937?s=19
اس حوالے سے اداکارہ یمنیٰ زیدی نے مروہ کی تصویر شئیر کرتے ہوئے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ ایک اور زینب،بس بہت ہو گیا اس کو ختم کرنے کے لئے آواز بلند کریں-

اداکارہ ثنا جاوید نے مروہ کی تصویر شیئر کی اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ایک اور 5 سال کی معصوم بچی کے ساتھ ظلم برپا ہوگیا۔ اس طرح کے واقعات اس وقت تک نہیں رکیں گے جب تک پاکستان میں عوامی سطح پر بچوں کے ساتھ زیادتی کے مرتکب افراد کو پھانسی دینے کا فیصلہ نہیں کیا جاتا۔

ثنا جاوید نے وزیراعظم سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں بچوں کے ساتھ زیادتی کرنے والے ملزمان کو سرعام پھانسی دینے کے قانون کا نفاذ کیا جائے۔


اداکار عاصم اظہر نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں اعلیٰ حکام پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ایک کام کرتے ہیں سب پر پابندی لگادیتے ہیں لیکن ان ملزمان کو پھانسی نہیں دینا بس۔ بہت اعلیٰ۔


عاصم اظہار نے مزید لکھا کہ مروہ کی طرح اور کتنی ننھی پریوں کے ساتھ یہ حادثات ہونے کے بعد ہم جاگیں گے انہوں نے مروہ سے معافی مانگتے ہوئے کہا ہمیں معاف کردو مروہ کیونکہ یہاں یہ زیادہ ٹینشن ہے کہ کون کیسے کپڑے پہن رہا ہے، کون کیسے شادی کررہا ہے۔ کون شیعیہ ہے کون سُنی – بس کچھ نہیں ہے تو وہ انسانیت۔
https://twitter.com/ArmeenaRK/status/1302634957060419587?s=19
اداکارہ ارمینا خان نے بھی ننھی مروہ کی مسکراتی ہوئی تصویر شیئر کی اور لکھا کہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا۔ میں نے بچی کی جلی ہوئی لاش کی تصویر دیکھی ہے اور یہ منظر خوفناک ہے آخر کب یہ سب ختم ہوگا؟

اس سے قبل اداکارہ اُشنا شاہ کا کہنا تھا کہ 5 سالہ بچی سے جنسی تشدد کے بعد اندوہناک قتل پر مجرموں کیلئے پھانسی کی سزا کافی نہیں ہےسماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اُشنا شاہ نے اپنی ٹوئٹ میں کہا تھا کہ 5 سالہ بچی کے قاتل جنونیوں کی شناخت کیلئے تفتیشی اور فارنسک جانچ کا ہر ذریعہ استعمال کیا جانا چاہئے جبکہ اِس بار صرف پھانسی کی سزا کافی نہیں مجرموں کو سرِ عام اور غیر انسانی سزا ہونی چاہئے۔

جنسی زیادتی میں ملوث افراد کو سرعام پھانسی دینی چاہئیے تاکہ انہیں دوسروں کے لیے مثال بنایا جاسکے اقرا عزیز

5 سالہ بچی کے قاتلوں کے لئے صرف پھانسی کی سزا کافی نہیں اُشنا شاہ

Leave a reply