تاریخ ایک مرتبہ پھر سے اپنے آپ کو دہرا رہی ہے — فرقان قریشی

0
78

نام: جولیس سیزر 44 قبل مسیح
سٹیٹس: عوامی مقبولیت اتنی بڑھ گئی تھی کہ تاحیات بادشاہ مقرر ہونے والا تھا ۔
نتیجہ: اپنی ہی پارلیمنٹ کے ہاتھوں assassinated

نام: حضرت عمر بن خطابؓ 644ء
سٹیٹس: تیزی سے دنیا میں ایک منصفانہ نظام کا قیام ۔
نتیجہ: ایک غلام جو اپنے حق میں فیصلہ چاہتا تھا ، کے ہاتھوں assassinated

نام: حضرت عثمان بن عفانؓ 656ء
سٹیٹس: ریاست میں قوانین کا نفاذ ۔
نتیجہ: قانون سے بھاگنے والے مصری گروپ کے ہاتھوں assassinated

نام: حضرت علی ابن طالبؓ 661ء
سٹیٹس: جنگ نہروان میں سٹینڈ لیا ۔
نتیجہ: خارجیوں کے ہاتھوں assassinated

نام: ابراہم لنکن 1865ء
سٹیٹس: سیاہ فاموں کے حقوق کے لیے جدوجہد کر رہے تھے ۔
نتیجہ: نسل پرستوں کے ہاتھوں assassinated

نام: امیرکن پریزیڈنٹ جان کینیڈی 1963ء
سٹیٹس: امیرکہ میں ایک سیکرٹ گورنمنٹ کی بات کرنے لگ گئے تھے ۔
نتیجہ: assassinated

نام: مہاتما گاندھی 1948ء
سٹیٹس: پاکستان کے قیام کو قبول کر لیا تھا ۔
نتیجہ : RSS کے شدت پسند کے ہاتھوں assassinated

نام: لیاقت علی خان 1951ء
سٹیٹس: جانی مانی راولپنڈی سازش کا شکار ۔
نتیجہ: سعد اکبر کے ہاتھوں assassinated جسے اسی وقت کسی اور نے مار دیا تھا ۔

نام: جورڈن کے بادشاہ کنگ عبداللہ 1951ء
سٹیٹس: امن کی کوششیں کر رہے تھے ۔
نتیجہ: assassinated

نام: سعودی عرب کے بادشاہ شاہ فیصل 1975ء
سٹیٹس: سعودی عرب کی ترقی کے لیے کوششیں کر رہے تھے ۔
نتیجہ: امیرکہ سے آئے اپنے بھتیجے کے ہاتھوں assassinated

نام: انور سادات 1981ء
سٹیٹس: شدت پسندی کے خاتمے کے لیے کوششیں کر رہے تھے ۔
نتیجہ: مصر کی ملٹری پریڈ کے دوران assassinated

نام: بینظیر بھٹو 2007ء
سٹیٹس: عوام میں بہت زیادہ مقبولیت حاصل کر گئی تھیں ۔
نتیجہ: معلوم اور نامعلوم ناموں کے ہاتھوں assassinated

ان سب ناموں میں آپ کو کیا pattern کامن نظر آ رہا ہے ؟

یہ سب لوگ کسی نہ کسی صورت میں اپنے مذہب یا ملک یا اپنے لوگوں کے لیے کچھ نہ کچھ کر رہے تھے اور انہیں عوام میں مقبولیت ملنا شروع ہو گئی تھی ۔

اور ان میں سے امیرکن پریزیڈنٹ جان کینیڈی … جو اچانک امیرکہ میں ایک shadow اور چھُپے ہوئے لوگوں کی حکومت کی بات کرنے لگ گئے تھے ان پر ایک نہیں بلکہ بیس مرتبہ assassination اٹیمپٹس ہوئی تھیں اور بالآخر ان میں سے ایک اٹیمپٹ ، کامیاب ہو گئی ۔

اللہ نہ کرے کہ ایسا ہو … لیکن تاریخ ایک مرتبہ پھر سے اپنے آپ کو دہرا رہی ہے ، اور تاریخ کے اسی پیٹرن کو دیکھتے ہوئے میری deductive logic مجھے بتاتی ہے …

کہ وہ دوبارہ attempts ضرور کریں گے ۔

اللہ تعالیٰ ہمارے پاکستان اور جو بھی اسلام اور پاکستان کا محسن ہے ، اسے دشمنوں سے محفوظ رکھے ۔

Leave a reply