fbpx

پی ٹی آئی برطانیہ کی قیادت سعودی عرب سے وقت سے پہلے ہی واپس چلے گئی

لندن:پی ٹی آئی برطانیہ کی قیادت سعودی عرب سے وقت سے پہلے ہی واپس چلے گئی ،اطلاعات کے مطابق پی ٹی آئی برطانیہ کی قیادت نے طے شدہ تاریخ سے ایک روز قبل ہی سعودی عرب سے نکل گئے

اس حوالے سے کہا جارہا ہے کہ عمران خان کے مشیر صاحبزادہ جہانگیر، پی ٹی آئی کے ڈونر انیل مسرت اور ان کے بہنوئی رانا عبدالستار کو ہفتہ کو واپس آنا تھا صاحبزادہ جہانگیر ، انیل مسرت اور رانا عبدالستار مسجد نبوی میں ہیش آئے ناخوشگوار واقعہ کے وقت مسجد میں موجود تھے

ادھر سعودی عرب سے ذرائع کا کہنا ہے کہ دستیاب فوٹج کے مطابق صاحبزادہ جہانگیر اور پی ٹی آئی برطانیہ کے صدر رانا عبدالستار بھی چور چور نعرے لگانے والے مظاہرین میں شامل تھے،فوٹج کے مطابق صاحبزادہ جہانگیر اور رانا عبدالستار نعرے لگاتے نظر آرہے ہیں

صاحبزادہ جہانگیر کو گرفتار کرنے کے مطالبے کے بعد انھوں نے سعودیہ سے نکلنے میں جلدی کی، یہ بھی بتایا جارہا ہے کہ نا خوشگوار واقعہ جمعرات کو افطاری کے وقت پیش آیا اور پی ٹی آئی کے رہنماوں نے اگلی سحری کے وقت سعودیہ چھوڑ دیا

صاحبزادہ جہانگیر کا مظاہرے کے انعقاد سے مکمل انکار، ان کا کہنا تھا کہ وہ نہ تو اس واقعہ میں ملوث ہیں اور نہ ہی ایسے رویے کوپسند کرتے ہیں ، ان کا کہنا تھا کہ جب سعودیہ کا پروگرام بنایا اس وقت شہاز شریف کے دورے کا شیڈول کا اعلان بھی نہیں ہوا تھا،

صاحبزادہ جہانگیر کے ہمراہ جانے ولاے وفد میں سات افراد شامل تھے، باقی چار ابھی سعودیہ میں ہی ہیں ،یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ واپس آنے والوں میں صاحبزادہ جہانگیر، انیل مسرت اور رانا عبدالستار شامل ہیں، سعودی عرب رہ جانے والے چار رہنما آج مانچسٹر پہنچیں گے، یہ بیان لندن پہنچ کر صاحبزادہ جہانگیر نے جاری کیا ہے

صاحبزادہ جہانگیر کے مطابق نہ تو سعودی پولیس نے انھیں حراست میں لیا اور نہ پوچھ گچھ کی