fbpx

ترکی میں لوگ جمع ہو کرعمران خان کی زندگی کیلئے دعائیں کر رہے ہیں،گورنر سندھ

اسلام آباد: سابق وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ کیا یہ کیا مقدمہ ہے جو سپریم کورٹ سن رہا ہے؟ پاکستان میں عدم اعتماد کی تحریک آتی ہے تو حرام کے پیسے سے خریدنے کی کوشش کی جاتی ہے

باغی ٹی وی : پی ٹی آئی کے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ڈی چوک پر احتجاجی مظاہرے سے گورنر سندھ، سابق وفاقی وزرا اسد عمر، شیریں مزاری، سینیٹر فیصل جاوید اور مراد سعید سمیت دیگر نے خطاب کیا۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ڈی چوک پر پاکستان تحریک انصاف کے کارکنان کی جانب سے منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے اسد عمر نے کہا کہ اسلام آباد نے عمران خان کو کبھی مایوس نہیں کیا۔

انہوں ںے سوال کیا کہ یہ کیا مقدمہ ہے جو سپریم کورٹ سن رہا ہے؟ پاکستان میں عدم اعتماد کی تحریک آتی ہے تو حرام کے پیسے سے خریدنے کی کوشش کی جاتی ہے، بکنے واے لوٹے 15/ 18 کروڑ میں بک رہے ہیں، ایک خاتون نے 23 کروڑ میں اپنا ضمیر بیچا، ضمیرفروش لوگوں پرلعنت ہے سندھ ہاؤس میں ضمیر فروشوں کو بولیاں لگائی گئیں۔

عبدالعلیم خان کے الزامات میں کوئی صداقت نہیں ہے،ترجمان وزیراعلیٰ آفس

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ڈی چوک پر منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ غلامی سے آزادی کی جنگ لڑنے والے ہمارے کپتان کی زندگی کو خطرہ ہے آج ترکی میں لوگ جمع ہو کر عمران خان کی زندگی کے لیے دعائیں کر رہے ہیں۔

گورنر سندھ عمران اسماعیل نے اپنے خطاب میں کہا کہ یہاں جو لوگ جمع ہوئے ہیں وہ عمران خان کے ساتھ ہیں، لوٹے اور ضمیرفروش اپنے محلوں و گلیوں میں ذلیل ہوں گے اس قوم کو غلامی سے نکالنے کے لیے عمران خان کوشش کر رہا ہے اور اس کوشش میں ہم سب ساتھ ہیں۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ڈی چوک پر منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر مراد سعید نے کہا کہ عمران خان نےاپوزیشن کی طرح جائیدادیں نہیں بنائیں، اللہ کا شکرہے کہ اندرونی و بیرونی دشمنوں کو بے نقاب کیا۔

عمران خان کو پتہ بھی نہیں کہ ان کے ساتھ کیا ہوا،وہ اپنی حکومت ختم ہونے پرجشن منا رہے ہیں،بلاول بھٹو

مراد سعید نے کہا کہ 7 مارچ کو وزیراعظم عمران خان کوخط لکھا جاتا ہے، خط میں امریکہ کوپتہ ہوتا ہے کہ تحریک عدم اعتماد آرہی ہے، قوم کےغداروں کوڈی چوک پرپھانسی دی جائے۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے ڈی چوک پر منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے رہنماتحریک انصاف اور سابق وفاقی وزیر حماداظہر نے کہا کہ اپوزیشن کوالیکشن کےاعلان پرخوش ہوناچاہیے،اپوزیشن جماعتوں کوخط کےمعاملےپرپارلیمانی کمیٹی میں آنےکی دعوت دی،حکومت نےغیرآئینی اقدام نہیں کیا،عوام کےپاس جانےکافیصلہ کیا-

ایوان صدر آرڈیننس فیکٹری بن چکا ہے،حمزہ شہباز