غیر قانونی شکار کرنے والی 05 بھارتی ماہی گیر کشتیوں کو پکڑ لیا گیا

0
51

کراچی :بھارتی ماہی گیروں کی طرف سے پاکستانی سمندری حدود کی خلاف ورزی جاری ہے ، ادھر پاکستانی سمندری حدود میں غیر قانونی شکار کرنے والی 05 بھارتی ماہی گیر کشتیوں کو پکڑ لیا گیا

18 فروری 2022 کو، پی ایم ایس اے کےجہاز نے PAK EEZ میں گشت کے دوران 05 ہندوستانی ماہی گیر کشتیوں کو 31 عملے کے افراد کیساتھ گرفتار کیا، جو کہ پاکستانی سمندری حدود کے اندر غیر قانونی شکار میں مصروف تھیں۔

کشتیوں کو پاکستانی قانون اور سمندر کے قانون سے متعلق اقوام متحدہ کے کنونشن کے مطابق مزید قانونی کارروائی کے لیے کراچی لے جایا گیا۔

اس سے چند دن پہلے پاکستان میری ٹائم سکیورٹی ایجنسی(پی ایم ایس اے) نےکھلے سمندر میں سرکریک کے قریب سے پاکستانی سمندری حدود میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے والے 13 ماہی گیروں کو گرفتار کرلیا تھا ۔

یاد رہے کہ اس دوران پاکستانی ماہی گیروں کی حفاظت کے لیے ‘آپریشن مستعد’ کے نام سے ایک فوکس آپریشن شروع کیا گیا کیونکہ یہ اطلاع ملی تھی کہ بھارتی ایجنسیاں جان بوجھ کر پاکستانی ماہی گیروں کو پاکستانی سمندری حدود میں سے گرفتار کرتی ہیں۔

ترجمان کے مطابق اس آپریشن کے دوران 5 فروری کو پی ایم ایس کے جہاز نے دو بھارتی ماہی گیرکشتیاں پکڑیں جن میں 13 ماہی گیر سوار تھے جو کہ پاکستانی زون کے اندر شکار میں مصروف تھے۔

ترجمان کا کہنا ہےکہ بھارتی کشتیاں اوکھا سے آتی ہیں جو پاکستان سے 70 ناٹیکل کے فاصلے پر ہے، یہ عمل ہمارے انڈس ڈیلٹا کے خطے میں جان بوجھ کر چھیڑ چھاڑ کا ذریعہ بن رہا ہے۔

ترجمان پاکستان میری ٹائم سکیورٹی ایجنسی کا کہنا ہے کہ دونوں کشتیوں کو پاکستانی اور سمندر کے قانون سے متعلق اقوام متحدہ کے کنونشن کی خلاف ورزی پر مزید قانونی کارروائی کے لیے کراچی لایا گیا ہے۔

Leave a reply