ورلڈ ہیڈر ایڈ

مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم جاری بدترین لاک ڈاؤن : کرفیو کا 49 واں روز، کشمیری چیخ رہے ہیں جبکہ عالمی برادری خاموش تماشائی

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا کشمیرکو ہتھیانے کے بعد ظلم کا جو نیا سلسلہ شروع ہوا ہے اس کو بھی آج 49 واں دن ہوچکا ہے ، کشمیری بھارتی مظالم کی وجہ سے چیخ رہے ہیں‌ ، نام نہاد عالمی برادری کو چپ لگ گئی ہے، مقبوضہ وادی میں کرفیو کا49 واں روز ہے اور عالمی ضمیر ابھی بھی بے حس ہے جو کشمیریوں کے ان مصائب پر نہ تو آواز بلند کر رہا ہے اور نہ ہی بھارت پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے،

دنیا بھر کا میڈیا بھارتی افواج کے کشمیر میں‌مظالم کو جس طرح بیان کررہا ہے اس سے پہلے ایسی سنگینی کو بیان نہیں کیا ، بھارت کی طرف سے 5 اگست کو کشمیر کو ہتھیانے کے بعد سے لے کر اب تک کشمیری اپنے ہی گھروں میں قیدی بن کر رہ گئے، بھارتی فوج نے کپواڑا میں گھر پر دھاوا بول دیا اور سامان کی توڑ پھوڑ کی، پلواما میں 2 افراد کو گرفتار کرلیا۔ مقبوضہ وادی میں کرفیو نافذ ہے، چپے چپے پر بھارتی فوج تعینات ہے۔

لوگوں کو گھروں سے نکلنے پر تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے، انٹرنیٹ، موبائل سروس بھی بند ہے، تمام حریت اور سیاسی رہنماؤں کو گھر اور جیلوں میں نظر بند کر رکھا ہے۔وادی میں مارکیٹیں ، دکانیں، بزنس اور تعلیمی ادارے بھی بند ہیں۔ مسلسل کرفیو کی وجہ سے سیب کی پکی فصلیں خراب ہونے لگیں۔ کسانوں کا کہنا ہے کہ وہ اپنی فصلیں مارکیٹوں تک پہنچانے میں ناکام ہیں۔

آزادی کے حق میں اور مودی سرکار کے مظالم کے خلاف آواز بلند کرتے نہتے افراد پر قابض فوج نے آنسو گیس کی شیلنگ کی اور گولیاں برسائیں جس سے متعدد کی حالت غیر ہوگئی۔ وادی بھر میں مودی سرکار کے خلاف مظاہرے شروع ہوگئے ہیں‌، بھارتی مظالم کے خلاف بارہمولا، کپواڑا، باندی پورہ، پلوامہ اور شوپیاں سمیت مختلف اضلاع میں شہری سڑکوں پر نکل آئے۔

مقبوضہ وادی میں تعینات بھارتی فوج نے خوف کا ماحول بنا دیا، کشمیری اپنے گھروں میں قید ہوگئے، لوگ روزمرہ کی ضروری اشیاء خریدنے سے قاصر ہیں، دودھ، بچوں کی خوراک، ادویات سب ختم ہوچکا ہے۔وادی میں تمام مساجد کی مانیٹرنگ کی جا رہی ہے، اب تک ہزاروں کشمیریوں کو گرفتار کیا جا چکا ہے

بھارتی فوج طاقت کے زور پر کشمیریوں کی آواز دبانے میں مصروف ہے۔ ہر گلی اور سڑک پر بھارتی فوج تعینات ہے، کشمیریوں کو گھروں سے نکلنے نہیں دیا جا رہا، مارکیٹ، دکانیں، ٹرانسپورٹ بند ہیں، کمیونی کیشن سسٹم بند جبکہ ٹی وی چینلز تک رسائی نہیں، مودی سرکار بھارتی سیاسی رہنماؤں کو بھی وادی کا دورہ کرنے کی اجازت نہیں دے رہی۔

ایک طرف بھارتی افواج کشمیریوں پر اس قدر مظالم کررہے ہیں کہ جن کی گونج دنیا بھر میں سنائی دی جانے لگی ہے ، اس کے باوجود تمام تر بھارتی مظالم کے کشمیری مسلمانوں کا حوصلہ بلند ہے، مسلسل کرفیو کے باوجود مظاہرے اور جگہ جگہ احتجاج جاری ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.