آ جاؤ استعفیٰ لے لو، وزیراعظم نے اپوزیشن کو کی پیشکش

0
27

آ جاؤ استعفیٰ لے لو، وزیراعظم نے اپوزیشن کو پیشکش کر دی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن کی بڑی بات مان لی، وزیراعظم نے اپوزیشن کی ڈیڈ لائن گزرنے کے بعد استعفیٰ کی پیشکش کر دی ہے،

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس کی کہانی منظر عام پر آ گئی ہے ،عمران خان نے اپوزیشن کو استعفے کی مشروط پیشکش کر دی ہے ،وزیراعظم عمرا ن خان نے اجلاس کے دوران کہا کہ اپوزیشن رہنما لوٹا پیسہ واپس کردیں تواستعفیٰ دینے کوتیارہوں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ استعفے دینے کیلئے ہمت وجرات چاہیے جوااپوزیشن میں نہیں ہے ، اپوزیشن کی استعفے دینے کی باتیں جھوٹی نکلی ہیں ۔ اپوزیشن نے لانگ مارچ کیا نہ ہی لوگوں کو اکھٹا کر سکی،

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ جن کا پیسہ باہر کے ملکوں میں پڑا ہو ان میں جرات نہیں ہوتی،اپوزیشن اخلاقی معیار پر بھی پورا نہیں اتری، 31 دسمبر کے بعد 31 جنوری بھی گزر گیا اپوزیشن نے وعدہ پورا نہیں کیا ،اب یہ لوگ استعفوں کی بجائے الیکشن کی اہمیت بتا رہے ہیں۔

وزیراعظم عمرا ن خان کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں ملک کی سیاسی،معاشی اورسیکیورٹی صورتحال پرغور کیا گیا ۔ اجلاس میں وزیراعظم نے وزراکی سیکیورٹی اورپروٹوکول کانوٹس لے لیتے ہوئے کہا کہ وزراسیکیورٹی کے نا م پرسرکاری وسائل کاغیرضروری استعمال نہ کریں،وزراء کتنی سیکیورٹی لیے پھرتے ہیں رپورٹ دی جائے،وزراء سے غیرضروری سیکیورٹی واپس لی جائے۔

اجلاس کے دوران وزیراعظم ایجوکیشن ریفارمزپروگرام کے تحت بسوں کی آپریشنل پالیسی کی منظوری دیدی ہے جبکہ وفاقی کابینہ نے انٹرنیشنل ایئرلائن کے لائسنس کی تجدید نوکا فیصلہ موخرکردیا ہے ۔وفاقی کابینہ کے اجلاس میں آثارقدیمہ محفوظ بنانے کیلئے بھارت سے لال پتھرکی درآم دکا معاملہ موخرکر دیا گیاہے جبکہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کے گزشتہ اجلاس کے فیصلوں ، کابینہ کمیٹی برائے سی پیک کے26 جنوری کے فیصلوں، کابینہ کمیٹی برائے قانونی مقدمات کے 21 جنوری کے فیصلوں کی توثیق کر دی گئی ۔

وزیراعظم کووزرا کی پارلیمنٹ اجلاسوں میں حاضری کی رپورٹ پیش کی گئی ،وزیراعظم نے عمرایوب اورحماداظہرکی پارلیمانی کارکردگی کی تعریف کی اورتمام وزراکوحاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی۔

Leave a reply