آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن نے وزیر اعظم، وزرائےاعلی،گورنرز، چیف جسٹس اورآرمی چیف سے بڑی اپیل کردی

0
25

لاہور :آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن نے وزیر اعظم، وزرا ئےاعلی،گورنرز، چیف جسٹس اورآرمی چیف سے بڑی اپیل کردی ،باغی ٹی وی کے مطابق کاشف مرزاکی زیر قیادت آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن کے مرکزی نمائندوں شاہد نور،میاں شبیر ہاشمی،ملک خالدمحمود،حنیف انجم ،صادق صدیقی،مزمل صدیقی،عمران یوسف،وسیم عابد نےاپنے مشترکہ اعلامیہ میں وزیر اعظم، وزرااعلی،گورنرز، چیف جسٹس اورآرمی چیف سے بڑی پیل کی ہے:

ذرائع کے مطابق آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن نے وزیر اعظم، وزرااعلی،گورنرز، چیف جسٹس اورآرمی چیف سے بڑی اپیل کرتے ہوئے یکم جون سے ملک بھر کے تعلیمی ادارے کھولنے کی درخواست کردی ، فیڈریشن نے 15 جولائی تک تعلیمی اداروں کو بند کرنے کے حکومتی فیصلہ کو مسترد کرتے ہوے تعلیم دشمن قراردیا گیاہے۔

اس حوالے سے پرائیویٹ سکول ایسوسی ایشنز کے صدر کاشف مرزا نے کہا کہ حکومتSOPsجاری کرےاور یکم جون سےملک بھر میں تمام سکولز ھرصورت کھولنے کااعلان کرے،بصورت اپنے SOPsکے تحت سکولز کھولنے پر مجبور ہونگےکورونا وائرس سے جاری لاک ڈاؤن کے باعث 2کروڑطلباکےتعلیمی نقصان کا ازالہ ناممکن ہے:کاشف مرزا کا کہنا تھا کہ 15جولائ تک تعلیمی اداروں کی بندش سے 50%تعلیمی ادارے مکمل بنداور10لاکھ لوگ بےروزگارہوجائینگے

کاشف مرزا نے کہا کہ نجی تعلیمی اداروں کا معاشی قتل عام کیا جارہا ہے۔ٹیچرز کی تنخواہیں فکس اورملک بھر میں 90 فیصد اسکول عمارتیں کرائے پر ہیں۔وزیر اعظم پاکستان پرائیویٹ سکولزکیلیے’’تعلیمی ریلیف پیکیج ‘‘ کااعلان کریں:کاشف مرزا کا کہنا تھا کہ سکولز کی ٹائمنگ صبح 7 تا10اور2شفٹ میں سماجی فاصلے کو برقرار رکھ کے کلاسز جاری رکھی جا سکتی ہیں۔چین کےصوبےووہان،انڈیا، ایران،بنگلہ دیش،سپین سمیت کئی ممالک میں تعلیمی ادارے کھل چکے ہیں

۔کاشف مرزا نے مزید کہا کہ انسانیت کے جذبہ اور کورنٹائیں سے نبٹنے کے لیے ملک بھرکے مستحق طلبا کی فیس ادائیگی کے لیے کرونا ایجوکیشنل ریلیف فنڈقائم کر دیاہے،وزیر اعظم پاکستان اور صوبائی وزراءاعلی کوملک بھر کے2لاکھ پرائیویٹ سکولزآئسولیشن سینٹرز اور قرنطینہ سنٹرز بنانیں اور 15 لاکھ ٹیچرز بطوروالیئنٹیرز پیشکش بھی کر دی گئی۔ بورڈ امتحانات منسوخ کرنے اور طلبا کا مستقبل برباد کرنےکی بجائے بورڈ امتحانات سماجی فاصلے کو برقرار رکھ کر تمام اضافی سرکاری و پرائیویٹ اساتذہ کی ڈیوٹیاں لگا کرسرکاری و پرائیویٹ سکولز وکالجزکو امتحانی سنٹرز بناکر منعقد کیے جائیں

۔کاشف مرزا کا کہنا تھا کہ بورڈ امتحانات منسوخ کرنےکی صورت میں،بورڈزفیس اور فنڈز کی مد میں 45لاکھ طلبا سے وصول شدہ25ارب روپےطلبا کوواپس کریں حکومت غیرآئینی اقدامات بند کرے۔سندھ ہائی کورٹ کی طرف سےفیسوں بارے حکومت سندھ کےآرڈنینس اور نوٹیفکیشن کو آئین سے متصادم اور غیر قانونی قراردیناپرائیویٹ سکولز فیڈریشن کے اصولی موقف کی فتح قرارہے:

۔کاشف مرزا نے مزید کہا کہ فیسوں کے حوالے سےحکومت پنجاب کا فیس میں 20فی صد کمی کا نوٹیفیکیشن اورآرڈیننس لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بنچ میں چیلنج کردیاگیا نوٹیفکیشنزآئین کے آرٹیکل 18،3،4،5، 25(1)،37اور38 سے متصادم،امتیازی اورغیر قانونی ہے:
سپریم کورٹ فیصلے کےپابند ہیں،وزیراعظم و چیف جسٹس پاکستان سے داد رسی کی اپیل کردی

Leave a reply