fbpx

31 برس بعد باپ کے قتل کا بدلہ، کمرے میں گھس کر ماری گولیاں

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں دو بیٹوں نے اپنے باپ کا بدلہ 31 برس بعد لے لیا

واقعہ بھارت کا ہے جہاں ایک شخس کو قتل کیا گیا تھا ، اسکی دو بیٹوں نے بدلہ لینے کی ٹھانی اور 31 برس بعد والد کے قتل کا بدلہ لے لیا ، ٹائمز آف انڈیا کے مطابق مدن سنگھ نامی مقتول صحافی راجستھان کے ضلع اجمیر شریف میں ایک گینگ کی طرف سے سکولوں اور کالجز کی طالبات کو بلیک میل کرکے انہیں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے سکینڈل پر تحقیقات کر رہا تھا اس سکینڈل میں ملوث سوائی سنگھ اور دیگر لوگوں نے مدن سنگھ کو فائرنگ کرکے قتل کرنے کی کوشش کی تا ہم وہ شدید زخمی ہوا اور ہسپتال پہنچ گیا جہاں اس کا علاج چل جا رہا تھا

غیر ملکی خاتون کے سامنے 21 سالہ نوجوان نے پینٹ اتاری اور……خاتون نے کیا قدم اٹھایا؟

بیوی طلاق لینے عدالت پہنچ گئی، کہا شادی کو تین سال ہو گئے، شوہر نہیں کرتا یہ "کام”

50 ہزار میں بچہ فروخت کرنے والی ماں گرفتار

ایم بی اے کی طالبہ کو ہراساں کرنا ساتھی طالب علم کو مہنگا پڑ گیا

تعلیمی ادارے میں ہوا شرمناک کام،68 طالبات کے اتروا دیئے گئے کپڑے

مبینہ طور پر دوران علاج چھ ملزمان ہسپتال میں گھسے اور اسے فائرنگ کر کے قتل کر دیا، صحافی کے قاتل گرفتار ہوئے، انہیں عدالت پیش کیا گیا، تا ہم عدالت نے ملزمان کو بعد میں بری کر دیا ،ملزمان کی بریت کے وقت مقتول صحافی کے بیٹوں سوریا پرتاب سنگھ اور دھرم پرتاب سنگھ نے اپنے باپ کے قتل کا بدلہ لینے کی ٹھان لی انہوں نے پہلے بھی سوائی سنگھ پر حملہ کیا تھا تاہم وہ بچ نکلنے میں کامیاب ہو گیا تھا۔ گزشتہ روز دونوں نے اجمیر شریف کی تحصیل پشکر میں واقع ایک سیاحتی مقام پر سوائے سنگھ کو فائرنگ کرکے قتل کر دیا،

خاتون پولیس اہلکار کے کپڑے بدلنے کی خفیہ ویڈیو بنانے پر 3 کیمرہ مینوں کے خلاف کاروائی

جنسی طور پر ہراساں کرنے پر طالبہ نے دس سال بعد ٹیچر کو گرفتار کروا دیا

آٹھ سالہ بچی کے ساتھ مبینہ زیادتی کا ڈراپ سین،والد لینا چاہتا تھا مخالفین سے دشمنی کا بدلہ

ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس پشکر اسلام خان کا کہنا ہے کہ کہ سوائی سنگھ پر حملے کے فوری بعد سوریا پرتاب سنگھ کو گرفتار کر لیا گیا تاہم اس کا بھائی دھرم پرتاب سنگھ اور ان کاایک نامعلوم ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہو گئےعینی شاہدین کا کہنا ہے کہ تین لوگ ریزارٹ پر سوائی سنگھ کے کمرے میں گھس گئے اوراسے گولیاں مار دیں